The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کی ضلع مہمند میں چیک پوسٹ پر افغان سرزمین سے حملے کی مذمت

اسلام آباد : پاکستان نے ضلع مہمند میں چیک پوسٹ پر افغان سرزمین سے حملے کی مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ افغانستان فوری طور پر دہشت گردوں کیخلاف کارروائی کرے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ پاکستان کی ضلع مہمند میں چیک پوسٹ پر حملے کی مذمت کرتے ہیں، دہشت گردوں نے مہمندمیں ملٹری چیک پوسٹ پر حملہ کیا اور افغان سرزمین سے فائرکئے۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ افواج پاکستان نے دہشتگردوں کی فائرنگ کامؤثر جواب دیا ، دہشت گردوں کی فائرنگ سے ایف سی نوجوان فضل واحد شہید ہوئے۔

ترجمان نے دہشت گردی کیلئے افغان سرزمین کےاستعمال کی مذمت کرتے ہوئے افغانستان کوفوری طور پر دہشتگردوں کیخلاف کارروائی کاکہاہے۔

مزید پڑھیں : سرحدپار سے فائرنگ، ایف سی کا جوان شہید

گذشتہ روز پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق دہشت گردوں نے سرحدپار سے ضلع مہمند میں بارڈر پوسٹ پر فائرنگ کی،  جس کا سیکیورٹی فورسز نے بھرپور جواب دیا،  فائرنگ کے تبادلے میں 25 سالہ ایف سی کا جوان فضل وحید شدید زخمی ہوا جو زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے شہید ہوگیا۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ شہید جوان فضل وحید شانگلہ سوات کا رہائشی ہے اور اس کی عمر 25 سال ہے۔

خیال رہے کہ یہ پاک افغان بارڈر پر سرحد پار سے فائرنگ کا پہلا واقعہ نہیں ہے، اس سے قبل بھی متعدد ایسے واقعات رونما ہوچکے ہیں جس میں پاکستانی شہریوں اور پاک فوج کے جوانوں کو نشانہ بنایا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں