ٹیکسٹائل سیکٹر کیلئے زیرو ریٹنگ کافی نہیں، پاکستان اکانومی واچ -
The news is by your side.

Advertisement

ٹیکسٹائل سیکٹر کیلئے زیرو ریٹنگ کافی نہیں، پاکستان اکانومی واچ

پاکستان اکانومی واچ کے صدر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا ہے کہ ٹیکسٹائل سیکٹر کیلئے زیرو ریٹنگ کی سہولت ناکافی ہے ، اسے مزید سہولیات دی جائیں تاکہ پاکستان بین الاقوامی منڈی میں پاؤں جما سکے۔

اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ پاکستانی معیشت میں اہم کردار ادا کرنے والے چودہ کھرب روپے کاٹیکسٹائل کا شعبہ توانائی بحران اور دیگر مسائل کی وجہ سے مسائل کا شکارہے ، جس کی بحالی کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ ملکی برامدات کا 57فیصدکمانے والا ٹیکسٹائل کا شعبہ جو مینوفیکچرنگ کا 46فیصد، لیبر کا 38فیصد اور حصہ جی ڈی پی کا نو فیصد ہے حال ہی میں اپنی تاریخ کے بد ترین بحران سے دوچار رہاہے تاہم بجٹ میں زیرو ریٹنگ کی وجہ سے اسے ریلیف ملا ہے۔

، مقامی مسائل اور حریف ممالک کی جانب سے اپنے ٹیکسٹائل کے شعبہ کو مراعات دینے کے سبب اسکے پاؤں بین الاقوامی منڈی سے اکھڑ رہے ہیں جبکہ اسے کھویا ہوا مقام دلوانے کیلئے حکومت مزید اقدامات کرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں