The news is by your side.

Advertisement

خوش خبری! پاکستان پولیو کے خاتمے کے قریب پہنچ گیا

کراچی: نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف چائلڈ ہیلتھ (این آئی سی ایچ) کے سابق ایگزیکیٹیو ڈائریکٹر نے خوش خبری سنائی ہے کہ پاکستان پولیو کے خاتمے کے قریب پہنچ گیا ہے۔

کراچی پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق ایگزیکٹوڈائیریکٹراین آئی سی ایچ ڈاکٹرجمال رضا نے بتایا کہ رواں سال پاکستان میں صرف پولیو کا ایک کیس رپورٹ ہوا ہے۔ انہوں نے اعداد و شمار کی بنیاد پر کہا کہ ہم پولیو کے خاتمے کے قریب پہنچ چکے ہیں۔

ڈاکٹر جمال رضا نے کہا کہ پولیو پر قابو پانے کے بعد اب ہمیں خسرہ اور روبیلا نامی بیماریوں پر بھی قابو پانا ہے، دنیا سے ان دونوں بیماریوں کا خاتمہ ناگزیر ہے کیونکہ ہر سال ان کی وجہ سے ایک لاکھ چالیس ہزار متاثرہ مریض کی اموات ہوتی ہیں۔ اُن کا کہنا تھا کہ دنیا کے 82 ممالک نے خسرہ جیسی وبا پر قابو پالیا جبکہ 40ملکوں نے روبیلا پرقابو پالیا ہے۔

ڈاکٹر جمال رضا نے بتایا کہ پاکستان میں خسرہ کے 8357 کیسز سامنے آچکے ہیں، ان میں سے 127 مریضوں کی اموات بھی ہوئیں، جن میں بچے بھی شامل ہیں جبکہ گزشتہ سال ملک میں خسرہ کے 2747 کیسز رپورٹ ہوئے اور 52 اموات ہوئیں ۔

مزید پڑھیں:  پاکستان میں انسداد پولیو کے لیے بھرپور اقدامات

یہ بھی پڑھیں: بل گیٹس نے پاکستانی پولیو ورکر کی ویڈیو انسٹاگرام پر شیئر کر دی

انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ پولیو کی طرح ملک سے خسرہ اور روبیلا پر کا خاتمہ بھی کرنا ہے، اس کے لیے والدین کو بس تھوڑی سی ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہوگا اور بچوں کے حفاظتی ٹیکوں کے کورس مکمل کروانا ہوں گے۔

ڈاکٹر جمال رضا نے والدین پر زور دیا کہ وہ بچوں کو پیدائشی نقائص اور معذوری سے بچانے کے لیے روبیلا کی ویکسین لازمی لگوائیں،  لوگ حفاظتی ویکسین کے حوالے سے منفی افواہیں پھیلاتے ہیں، جو سراسر غلط اور بے بنیاد ہیں، آپ ان پر توجہ نہ دیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں