The news is by your side.

Advertisement

امریکی سفارت خانے کی بیت المقدس منتقلی پر پاکستان کا اظہار تشویش

اقوام متحدہ نے بھی رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اسرائیل سے طاقت کا استعمال بند کرنے کا مطالبہ کردیا ہے

اسلام آباد: امریکی سفارت خانے کی بیت المقدس منتقلی پر پاکستان کی جانب سے اظہار تشویش کیا گیا ہے، دفتر خارجہ نے کہا کہ قرار دادوں کے باوجود سفارت خانے کی منتقلی پر تشویش ہے۔

تفصیلات کے مطابق دفتر خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ امریکی اقدام عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہے، امریکا نے قراردادوں کے باوجود سفارت خانہ منتقل کیا۔

ترجمان نے کہا کہ پاکستانی قوم فلسطینی عوام کے ساتھ پہلے ہی اظہار یک جہتی کرچکی ہے، پاکستان خود مختار فلسطینی ریاست کے مؤقف کا اعادہ کرتا ہے۔

خیال رہے کہ آج امریکا نے بیت المقدس میں اپنے سفارت خانے کا افتتاح کردیا ہے جس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا نے بھی شرکت کی۔

دوسری جانب سفارت خانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقلی کے خلاف فلسطینیوں کی احتجاجی ریلی پر اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 52 فلسطینی شہید ہوگئے ہیں، جس پر ترکی کے وزیر اعظم نے شدید مذمت کی ہے۔

ترک وزیر اعظم بن علی یلدرم کا کہنا تھا کہ ہم اسرائیلی فوج کی جانب سے فلسطینیوں پر ظلم کی مذمت کرتے ہیں، انھوں نے کہا اسرائیل کا ساتھ دینے والے بھی اس ظلم میں برابر کے شریک ہیں۔

اقوام متحدہ کا رد عمل


فلسطینیوں کی بڑی تعداد میں ہلاکت پر اقوام متحدہ نے بھی رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اسرائیل سے طاقت کا استعمال بند کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔

امریکی سفارتخانہ بیت المقدس منتقل، اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 43 فلسطینی شہید


اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ غزہ میں فلسطینیوں کو قتل اور زخمی کرنے کا سلسلہ بند ہونا چاہیے، واضح رہے کہ آج کے واقعے میں سو سے زائد فلسطینی زخمی ہوئے جن میں 74 بچے، 23 خواتین اور 8 صحافی بھی شامل ہیں۔

اقوام متحدہ میں انسانی حقوق کے ہائی کمشنر زید رعد الحسین نے اپنے بیان میں کہا کہ اسرائیلی فوجی نہتے شہریوں کو نشانہ بنا رہے ہیں، غزہ میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ فوری بند کی جائے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں