site
stats
پاکستان

پاکستان کوسرحد پارسے دہشت گردی کےخطرےکا سامنا ہے‘ ملیحہ لودھی

Maleeha Lodhi

نیویارک : اقوام متحدہ میں پاکستان کی سفیر ملیحہ لودھی کا کہنا ہے کہ پاکستان کوسرحد پارسے دہشت گردی کےخطرےکا سامنا ہے ان دہشت گردی کرنے والی قوتوں کو پاکستان شکست دے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کی سفیر ملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ پاکستان کی سرزمین پر دہشت گردی کی کارروائیوں کی منصوبہ بندی اور مالی معاونت سرحد پار سے کی جاتی ہے۔

اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب ملیحہ لودھی نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف دنیا کا سب سے بڑا آپریشن پاکستان نے کیا اور اس کی کامیابیوں کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ گزشتہ 2 سال کے دوران ملک میں دہشت گردی کے واقعات میں کمی آئی ہے۔

ملیحہ لودھی نے کہا کہ پاکستان میں دہشت گردی 2006 کے بعد کم ترین سطح پرہے۔ انہوں نے کہا کہ داعش جیسی قوتوں سےنمٹنےکے لیے مشترکہ لائحہ عمل کی ضرورت ہے۔

ملیحہ لودھی نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان نے 27 ہزار سے زائد شہریوں اور سیکورٹی فورسز کی جانوں کا نذرانہ پیش کیا اور 120 ارب ڈالر سے زائد کا مالی نقصان ہوا۔


بھارت جنوبی ایشیا میں دہشت گردی کی ماں ہے‘ ملیحہ لودھی


واضح رہے کہ 24 ستمبر کو اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں بھارتی وزیرخارجہ کی تقریرکا جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ بھارت جنوبی ایشیا میں دہشت گردی کی ماں ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top