The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کی پہلی بائیو مکینک لیب قائم

لاہور: پاکستان میں پہلی بائیو مکینک لیب کا افتتاح کردیا گیا۔ پی سی بی اور نجی یونیورسٹی کے تعاون سے بنائی جانے والی اس لیب کے بعد اب بولرز کو ایکشن ٹیسٹ کروانے کے لیے کسی اور ملک نہیں جانا پڑے گا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ اور لاہور یونیورسٹی آف مینجمنٹ سائنسز (لمز) تعاون سے پاکستان کی پہلی بائیو مکینک لیب کا افتتاح چیئرمین پی سی بی شہریار خان نے کیا۔ اس موقع پر یونیورسٹی کے وائس چانسلر، قومی کرکٹر محمد حفیظ اور نیشنل کرکٹ اکیڈمی کے ہیڈ کوچ مشتاق احمد بھی موجود تھے۔

شہریار خان کا کہنا ہے کہ اگلے مرحلہ میں بائیو مکینک لیب کی آئی سی سی سے منظوری لی جائے گی جس کے بعد دنیا کی آٹھویں لیب پاکستان میں ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ محمد حفیظ کا ایکشن کا ٹیسٹ اسی لیب میں ہوگا اور نتیجے کے لیے آئی سی سی کو بھیجا جائے گا۔

چیئرمیں پی سی بی کے مطابق لیب میں ڈومیسٹک کرکٹ کے 27 مشکوک ایکشن کے حامل باؤلرز کا ٹیسٹ بھی کیا جائے گا۔

شہریارخان نے اعلان کیا کہ نئے سیزن کے آغاز میں حفیظ کاردار کپ کے نام سے قومی اسکول چمپئن شپ کا انعقاد کیا جائے گا جس میں چاروں صوبے کے سرکاری اور نجی اسکولوں کے طلبہ حصہ لیں گے جو 16 ریجن اور ان کے 97 کرکٹ ڈسٹرکٹ کے زیر انتظام منعقد ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پی سی بی کی جانب سے نیشنل کلب چمپئن شپ اور انٹر یونیورسٹی مقابلوں کا اعلان جلد کیا جائے گا۔

شہریار خان نے بتایا کہ کاکول میں جاری بوٹ کیمپ آئندہ 3 سے 4 روز میں ختم ہوجائے گا جس کے بعد لاہور میں کیمپ لگایا جائے گا۔ جون کے پہلے ہفتے میں دورہ انگلینڈ کے لیے قومی ٹیم کا اعلان بھی کر دیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں