افغانستان کا دورہ مفید رہا، وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی -
The news is by your side.

Advertisement

افغانستان کا دورہ مفید رہا، وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی افغانستان کا دورہ مکمل کر کے اسلام آباد پہنچ گئے، انھوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کا دورہ مفید رہا، دو طرفہ تجارتی امور کے سلسلے میں مشترکہ اقتصادی کمیشن بنایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کی جانب سے خطے میں امن کوششوں کی ابتدا افغانستان سے ہو گئی ہے، وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے کابل میں افغان صدر اشرف غنی سے ملاقات کی۔

افغانستان دورے میں وزیرِ خارجہ نے افغان چیف ایگزیکٹو عبداللہ عبداللہ سے بھی ملاقات کی، ملاقا ت میں سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ اور وفد کے دیگر ارکان بھی شریک تھے، ملاقات میں دو طرفہ تعلقات اور باہمی دل چسپی کے دیگر امور پر بات چیت کی گئی۔

کابل میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود نے کہا کہ دورۂ افغانستان مفید رہا، پاک افغان چیلنجز مشترکہ ہیں اس لیے مل کر ان سے نمٹنا ہوگا۔ اس موقع پر افغان وزیرِ خارجہ صلاح الدین ربّانی کا کہنا تھا کہ پاکستان اور افغانستان کا امن پورے خطے کا امن ہے۔


کابل: شاہ محمود قریشی کی اشرف غنی اور افغان ہم منصب سے ملاقات


افغان صدر اشرف غنی، چیف ایگزیکٹو عبداللہ عبداللہ اور افغان ہم منصب صلاح الدین ربّانی کے ساتھ ملاقاتوں میں دو طرفہ تجارتی امور، پاک افغان امن و استحکام کے لیے ایکشن پلان اور بارڈر منیجمنٹ پر گفتگو کی گئی۔

وزیرِ خارجہ شاہ محمود کا کہنا تھا کہ اکتوبر میں مذاکرات کا اگلا دور ہوگا، جب کہ افغانستان کا اقتصادی کمیشن اگلے ماہ پاکستان کا دورہ کرے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں