site
stats
پاکستان

قصداً پاکستان آنے والا بھارتی سپاہی بھارت کے حوالے

راولپنڈی: پاکستان نے ایل او سی عبور کر کے پاکستان آنے والے بھارتی سپاہی کو بھارت کے حوالے کردیا۔ یہ فوجی اس دن پاکستان آیا تھا جب بھارت نے ایل او سی کی خلاف ورزی کو سرجیکل اسٹرائیکس کا نام دیا تھا۔

دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ چندو بابو لعل چوہان نامی بھارتی سپاہی کو دوپہر ڈھائی بجے بھارتی حکام کے حوالے کیا گیا۔ بھارتی سپاہی کی حوالگی واہگہ بارڈر پر عمل میں آئی۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ یہ حوالگی جذبہ خیر سگالی کے تحت عمل میں لائی گئی ہے۔

چندو بابو لال چوہان کو اس کی سرکاری بندوق بھی واپس کی گئی ہے جبکہ خیر سگالی کے طور پر اسے مٹھائی کا ڈبہ بھی دیا گیا۔

اس سے قبل پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے سربراہ میجر جنرل آصف غفور نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹوئٹ کے ذریعہ مذکورہ سپاہی کی بھارت کو حوالگی کا اعلان کیا تھا۔

آئی ایس پی آر کا مزید کہنا تھا کہ سپاہی اپنے افسران کے سخت رویے سے نالاں تھا اور وہ قصداً پاکستان میں داخل ہوا۔ اس وقت وہ مقبوضہ کشمیر میں تعینات تھا اور پاکستان میں داخل ہونے کے بعد اس نے خود کو پاکستانی فوجیوں کے حوالے کردیا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی سپاہی کو وطن واپسی کے لیے قائل کیا گیا جس کے بعد اسے عالمی قوانین کی پاسداری کرتے ہوئے اور جذبہ خیر سگالی کے تحت واہگہ بارڈر پر بھارت کے حوالے کردیا جائے گا۔

یاد رہے کہ 29 ستمبر کو بھارتی فوج نے بھمبھر، تتہ پانی، کیل اور لیپہ سیکٹروں پر بلا اشتعال فائرنگ کی۔ فائرنگ کا سلسلہ رات ڈھائی بجے سے اگلی صبح آٹھ بجے تک جاری رہا۔

بھارت نے اپنی اس کارروائی کو سرجیکل اسٹرائیکس کا نام دیا تھا جو اس کے اپنے ہی گلے پڑ گیا۔ بھارتی اپوزیشن نے ہی سرجیکل اسٹرائیکس کا ثبوت مانگ لیا جبکہ جھوٹے دعوے کی وجہ سے بھارت کی اسٹاک مارکیٹ بھی بیٹھ گئی۔

اقوام متحدہ نے بھی بھارتی دعوے کو مسترد کردیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top