حکومت کا خزانہ اور ہاکی فیڈریشن کے اکاؤنٹس خالی، ایشین گیمز کی تیاریاں متاثر -
The news is by your side.

Advertisement

حکومت کا خزانہ اور ہاکی فیڈریشن کے اکاؤنٹس خالی، ایشین گیمز کی تیاریاں متاثر

اسلام آباد: حکومت کا خزانہ اور پاکستان ہاکی فیڈریشن کے اکاؤنٹس خالی ہونے کی وجہ سے آئندہ ماہ انڈونیشیا میں ہونے والے اٹھارویں ایشین گیمز کی تیاریاں متاثر ہونے لگیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان ہاکی فیڈریشن کے پاس فنڈز ختم ہونے کے باعث ایشین گیمز کے لیے کھلاڑیوں کی تیاریاں ناقص رہ جانے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کو ایشین گیمز کی تیاریوں کے سلسلے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے، فیڈریشن کے اکاؤنٹس خالی ہوچکے ہیں، کھلاڑیوں کے ڈیلی الاؤنس کے لیے بھی پیسے نہیں رہے۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ نگراں حکومت بھی خزانہ خالی ہونے کا رونا رونے لگی ہے، قومی کھیل کو سہارا دینے کے لیے حکومتی خزانہ بے بس ہو چکا ہے۔

دوسری طرف موجودہ صورت حال نے قومی ہاکی ٹیم کے ہیڈ کوچ، منیجر اور کپتان کو بھی پریشانی سے دوچار کر دیا ہے، خیال رہے کہ ایشین گیمز کے لیے تربیتی کیمپ میں شامل کھلاڑیوں نے بائیکاٹ کی دھمکی دی ہے۔

ہاکی ٹیم کے کھلاڑیوں کے گھروں کے چولھے ٹھنڈے پڑنے لگے، ایشین گیمز کے بائیکاٹ کی دھمکی


ذرائع کے مطابق پاکستان ہاکی فیڈریشن کے حکام نے نگراں حکومت سے رابطہ کر کے قومی کھیل کو بچانے کی اپیل کی ہے، تاہم نگراں حکومت کا کہنا ہے کہ صرف قومی کھیل ہی نہیں، تمام فنڈز خزانہ خالی ہونے کی وجہ سے روکے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ اٹھارویں ایشین گیمز آئندہ ماہ انڈونیشیا میں 18 اگست سے منعقد ہوں گے جو جکارتہ اور پالمبنگ میں 2 ستمبر تک جاری رہیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں