پاکستانی جنیوا کمیشن نے کشمیری رہنماؤں کو ویزہ فراہم کرنے کا مطالبہ pakistan
The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی جنیوا کمیشن کا کشمیری رہنماؤں کو ویزہ فراہم کرنے کا مطالبہ

اسلام آباد : سوئس سفارتی مشن کا جنیوا میں انسانی حقوق کمیشن کے اجلاس کے لیے کشمیری رہنماؤں کو ویزہ فراہم کرنے سے انکار کردیا ہے جس کا نوٹس لیتے ہوئے پاکستانی جنیوا مشن نے سوئس حکومت سے کشمیری رہنماؤں کو ویزہ کی فراہمی اور پاکستان مخالف سرگرمیوں کو روکنے کا مطالبہ کردیا.

تفصیلات کے مطابق جنیوا میں انسانی حقوق کمیشن کا اجلاس ہونے جا رہا ہے جس میں شرکت کے لیے کشمیری رہنماؤں کی درخواست کو مسترد کرتے ہوئے سوئس سفارتی مشن نے کشمیری رہنماؤں کو ویزہ فراہمی سے انکار کردیا ہے.

ذرائع کے مطابق مودی سرکار کی ایماء پر منظم منصوبہ بندی کے تحت سفارت خانے نے کشمیری رہنماؤں کو ویزے جاری نہیں کیے تاکہ مقبوضہ کشمیر میں مظلوم اور نہتے کشمیریوں پر قابض بھارتی فوج کے مظالم کا دنیا کو پتہ نہ چل جائے اور بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب نہ ہوجائے.

دوسری جانب سوئٹزر لینڈ نے پاکستان مخالف تنظیموں کوکھلی چھوٹ دے رکھی ہے جہاں پاکستان مخالف قوتیں اپنی سرگرمیاں آزادانہ طور پر جاری رکھے ہوئے ہیں.


 سوئٹرزلینڈ میں آزاد بلوچستان کے اشتہار، پاکستان کا شدید احتجاج


ذرائع کے مطابق دہشت گردوں اور پاکستان مخالف عناصرکو خصوصی طور پر جنیوا بھجوایا گیا ہے اورسوئٹزر لینڈ میں دہشت گردوں کو مکمل تعاون فراہم کیا جا رہا ہے جنہیں یورپین اور بھارتی فنڈنگ کے ساتھ ساتھ سوئٹزرلینڈ اور امریکا کی طرف سے بھی مالی معاونت شامل ہے.

اس حوالے سے پاکستان کا اعلیٰ سطح پرسوئس حکومت سے رابطہ بھی ہوا ہے جہاں جنیوا پاکستانی مشن نے اپنا احتجاج ریکارڈ کراتے ہوئے پاکستان مخلاف سرگرمیوں میں اعانت کی بندش اور کشمیری رہنماؤں کو فوری طور پر ویزہ جاری کرنے کا ماطلبہ کیا گیا ہے.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں