The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ لاہور میں تیسرا لیور ٹرانسپلانٹ آپریشن کامیاب

لاہور : پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ لاہور میں تیسرا لیور ٹرانسپلانٹ آپریشن کامیاب ہو گیا، وزیر صحت پنجاب کا کہنا ہے کہ لیور ٹرانسپلانٹ کرانے کے  خواہاں مریضوں کو لاکھوں روپے خرچ کر کے بیرون ملک نہیں جانا پڑے گا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ لاہور میں تیسرا لیور ٹرانسپلانٹ آپریشن کامیاب رہا ہے، لیور ڈونر اور مریض دونوں صحت یاب ہیں، لیور ٹرانسپلانٹ آپریشن سرجن ڈاکٹر فیصل ڈار نے کیا۔

پاکستان میں لیور ٹرانسپلانٹ کا آغاز انتہائی خوش آئند ہے

ڈاکٹر یاسمین راشد

وزیر صحت پنجاب کا کہنا تھا پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ لاہور میں پہلے اور دوسرے لیور ٹرانسپلانٹ کے ڈونرز کو صحت یابی کے بعد ڈسچارج کیا جا چکا ہے، پاکستان میں لیور ٹرانسپلانٹ کا آغاز انتہائی خوش آئند ہے۔

ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ لیور ٹرانسپلانٹ کرانے کے خواہاں مریضوں کو لاکھوں روپے  خرچ کر کے بیرون ملک نہیں جانا پڑے گا، لیور ٹرانسپلانٹ کے کامیاب آپریشن پر  پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹی ٹیوٹ لاہور کی انتظامیہ اور آپریشن کرنے والی ٹیم مبارکباد کی مستحق ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جگر کے مرض میں مبتلا مریضوں کیلئے پی کے ایل آئی بہترین علاج گاہ ہے اور مزید سہولیات فراہم کرنے کیلئے استعداد کار میں اضافہ کیا جائے گا۔

یاد رہے 9 مارچ کو پاکستان کڈنی اینڈ لیور انسٹیٹیوٹ میں پہلی جگر ٹرانسپلانٹ سرجری کی گئی تھی ، رحیم یار خان سے تعلق رکھنے والے 31سالہ مریض محمد ندیم کو اس کی 19سالہ بھانجی نے جگر عطیہ کیا تھا۔

بعد ازاں سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ڈاکٹر سعید اختر، ڈاکٹر فیصل، سابق صوبائی وزیرصحت خواجہ سلمان اور تمام متعلقہ افراد کو مبارک دیتے ہوئے کہا تھا یہ سہولت ایسے تمام مریضوں کیلئے مفت ہوگی جو علاج کی استطاعت نہیں رکھتے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں