The news is by your side.

Advertisement

حکومت نے نوازشریف کے دور میں لیا گیا بڑا قرضہ ادا کردیا

اسلام آباد : نوازشریف کے دور میں لیے گئے مہنگےقرضوں کی ادائیگیاں جاری ہیں، حکومت نےایک ارب ڈالرکےسکوک بانڈزکی ادائیگی کر دی، اثرات آئندہ ہفتے زرمبادلہ ذخائر کے اعدادوشمارمیں ظاہر ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق ملکی معاشی منظر نامے پر بیشتر اشاریوں میں بہتری جاری ہے اور ساتھ ہی حکومت کی جانب سے قرضوں کی ادائیگی بھی کی جا رہی  ہے، پاکستان نے سکوک بانڈزکی مد میں لئے گئے ایک ارب ڈالر کی ادائیگی کردی۔

یہ سکوک بانڈز گزشتہ دورِحکومت میں لئے گئے تھے اور بانڈز پر شرح سود چھ اعشاریہ سات پانچ فیصد تھی، سکوک بانڈز سال 2014 میں لئے گئے تھے، جن کی میچورٹی پانچ سال کی تھی۔

بانڈزکی مد میں کی گئی ادائیگی کے اثرات آئندہ ہفتے زرمبادلہ ذخائرکےاعدادوشمارمیں ظاہر ہوں گے۔

مزید پڑھیں : ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری کا حجم 1 ارب ڈالرسے تجاوز کرگیا

گزشتہ دو ہفتوں سے ملکی زرمبادلہ ذخائرمیں اضافے کا رجحان دیکھا جارہا ہے، ماہرین کے مطابق اضافے کی وجہ غیر ملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے ٹی بلز میں سرمایہ کاری ہے، رواں مالی سال ٹی بلز میں ایک ارب ڈالرز سے زائد کی سرمایہ کاری ریکارڈ کی گئی۔

یاد رہے اسٹیٹ بینک کا کہنا تھا کہ غیرملکیوں کی ٹی بلزمیں سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا، یکم جولائی سے اب تک غیرملکی سرمایہ کاروں نے ایک ارب سات کروڑبیس لاکھ ڈالرکے ٹی بلزخریدے، سرمایہ کاروں میں بڑی تعداد امریکی اوربرطانوی مالیاتی اداروں کی ہے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق صرف نومبرمیں ٹی بلزمیں غیرملکی سرمایہ کاری کاحجم تریسٹھ کروڑدس لاکھ ڈالررہا ، شرح سود میں اضافے اور مارکیٹ بیسڈ ایکس چینج ریٹ کے باعث ٹی بلزغیرملکی سرمایہ کاروں کیلئے پرکشش ہوگئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں