The news is by your side.

Advertisement

ماڈل کورٹس نے 373 کیسز نمٹا دیے، 5 مجرمان کو سزائے موت

اسلام آباد: پاکستان کی ماڈل کورٹس نے تیز ترین سماعت کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے آج 373 کیسز نمٹا دیے۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز بابر ملک کے مطابق پاکستان کی ماڈل کورٹس میں مقدمات کی تیز ترین سماعتوں کا سلسلہ جاری ہے، اس ضمن میں آج 27 ستمبر کو ملک کے مختلف علاقوں میں قائم کردہ 167 کورٹس نے 373 مقدمات کا فیصلہ سنایا۔

تمام عدالتوں نے 573 گواہان کے بیانات کی روشنی میں قتل کے 60، 85 منشیات کے مقدمات سنائے، جن میں پنجاب میں قتل کے 26، سندھ 22، خیبرپختونخواہ 9 اور بلوچستان سے 3 کیسز اسی طرح منشیات نے صوبائی سطح پر بالترتیب 52، 11،20 اور دو مقدمات میں مجرمان کو سزائے سنائی گئیں۔

ماڈل کورٹس نے پانچ مجرمان کو سزائے موت 6 کو عمر قید جبکہ دیگر 31 مجرمان کو 63 سال 8 ماہ قید کی سزا اور مجموعی طور پر 34 لاکھ 55 ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی۔

مزید پڑھیں: ماڈل کورٹس میں تیز ترین سماعتیں جاری، 188مقدمات کا فیصلہ، دو مجرموں کو عمر قید

ڈائٹریکٹر جنرل مائیٹرنگ سیل برائے ماڈل کورٹس سہیل ناصر کے مطابق 96سول ایپلٹ ماڈل کورٹس نے آج مجموعی طور پر 230دیوانی، فیملی اور رینٹ اپیلوں و درخوست نگرانی کے فیصلے کر دیے جبکہ 110 ماڈل مجسٹریٹس عدالتوں نے 179 مقدمات کے فیصلے سنائے۔

سول ایپلٹ اور مجسٹریٹ کی عدالتوں نے 486 گواہان کے بیانات قلم بند کر کے 87 مجرمان کو 30 سال اور تین ماہ قید سمیت 19 لاکھ 27 ہزار روپے سے زائد جرمانے کی سزا سنائی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں