The news is by your side.

Advertisement

قومی اسمبلی کا ملازم فراڈ کے الزام میں گرفتار

اسلام آباد: قومی اسمبلی میں تعینات سابق آفیسر فاروق عرف مخدوم زادہ عبد الکریم کو فراڈ کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کے سابق ملازم فاروق کے خلاف ایف آئی اے اینٹی کرائم سرکل نے شکایات موصول ہونے پر کارروائی کی۔

ایف آئی اے نے کہا ہے کہ ملزم فاروق عرف مخدوم زادہ عبد الکریم پر قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں نوکری کے لیے لوگوں سے فراڈ کا الزام ہے۔

ایف آئی اے کے مطابق ملزم فاروق خود کو قومی اسمبلی کا ایڈیشنل سیکریٹری ظاہر کرتا تھا، ایڈیشنل سیکریٹری کی جعلی حیثیت سے اس نے کئی لوگوں کو نوکری کے نام پر دھوکا دیا۔

ایف آئی اے نے ملزم کے قبضے سے 21 لاکھ روپے بھی برآمد کرلیے، ملزم کو مقامی عدالت میں پیش کرکے دو ہفتے کا ریمانڈ لے لیا ہے۔

رکن قومی اسمبلی پر خاتون کو ہراساں کرنے کا الزام، انصاف کی اپیل


واضح رہے کہ ملزم فاروق کے خلاف قومی اسمبلی سیکریٹریٹ سے ایف آئی اے کو شکایت موصول ہوئی تھی کہ مذکورہ آفیسر ناپسندیدہ سرگرمیوں میں ملوث ہے۔

واضح رہے کہ قومی اسمبلی نے 31 مئی کی رات 12 بجے اپنی 5 سال کی آئینی مدت پوری کی ہے، جس کے بعد ملک میں یکم جون سے ملکی امور چلانے اور آئندہ انتخابات کے انعقاد کے لیے نگراں حکومت کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں