The news is by your side.

Advertisement

مالی سال 2018-19ء کے پہلے پانچ ماہ، تجارتی خسارہ 14.51 ارب ڈالر تک پہنچ گیا

اسلام آباد: ادارہ برائے شماریات پاکستان (پی بی ایس) کا کہنا ہے کہ مالی سال 2018-19ء کے پہلے پانچ ماہ میں تجارتی خسارہ 14.51 ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔

تفصیلا ت کے مطابق مالی سال 2018-19 ء کے پہلے پانچ ماہ ( جولائی تا نومبر 2018ء ) کے دوران برآمدات اور درآمدات میں نمایاں اضافے کے نتیجے میں تجارتی خسارہ 14.51 ارب ڈالر کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گیا۔

ادارہ برائے شماریات پاکستان (پی بی ایس) کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق مالی سال 2018-19 ء کے پہلے پانچ ماہ (جولائی تا نومبر 2018ء) کے دوران 9 ارب 12کروڑ ڈالر کی برآمدات کی گئیں، جو گزشتہ مالی سال 2017-18 ء کے پہلے پانچ ماہ (جولائی تا نومبر 2017ء) کی 9 ارب ڈالر کی برآمدات کے مقابلے میں 11کروڑ 60 لاکھ ڈالر زیادہ رہیں۔

اس طرح گذشتہ سال کے مقابلے میں برآمدات میں 1.29 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا، دوسری جانب ملکی درآمدات مالی سال 2018-19ء کے پہلے پانچ ماہ (جولائی تا نومبر 2018ء) کے دوران 23 ارب 63کروڑ ڈالر رہیں، جو گذشتہ مالی سال 2017-18ء کے پہلے پانچ ماہ (جولائی تا نومبر 2017ء) کی 23 ارب 81 کروڑ ڈالر کی درآمدات کے مقابلے میں18 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کم رہیں۔

پی بی ایس کا کہنا ہے کہ اس طرح درآمدات میں 0.78 فیصدکی کمی ریکارڈ کی گئی، اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ مالی سال 2017-18ء کے پہلے پانچ ماہ (جولائی تا نومبر 2017ء) کے دوران تجارتی خسارہ 14 ارب 81کروڑ 40 لاکھ ڈالر تھا، جو مالی سال 2018-19ء کے پہلے پانچ ماہ (جولائی تا نومبر 2018ء) کے 14 ارب 51 کروڑ 30 لاکھ ڈالر کے تجارتی خسارے کے مقابلے میں 31 کروڑ ڈالر سے کم رہا، اس طرح تجارتی خسارے میں 2.03 فیصدکمی ریکارڈ کی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں