The news is by your side.

Advertisement

انسداد پولیو کے لیے حکومت کا اہم فیصلہ

اسلام آباد: کرونا وائرس کی وجہ سے آنے والے تعطل کے باعث انسداد پولیو کی مہم 4 ماہ تک متواتر چلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اب تک ملک میں رواں برس پولیو کیسز کی تعداد 68 ہوچکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے کرونا وائرس سے انسداد پولیو مہم کو پہنچنے والے نقصان کے ازالے کا فیصلہ کرلیا، رواں سال کی آخری سہ ماہی میں متواتر انسداد پولیو مہمات چلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ رواں سال کی آخری سہ ماہی میں ہر ماہ انسداد پولیو مہم چلائی جائیں گی۔

ذرائع کے مطابق متواتر پولیو مہم کا مقصد کرونا وبا سے ہوئے نقصان کا ازالہ کرنا ہے، کرونا وائرس کے باعث رواں سال مارچ میں انسداد پولیو مہم مؤخر کر دی گئی تھیں تاہم کرونا وائرس کی صورتحال بہتر ہونے پر جولائی میں انسداد پولیو مہم کا از سر نو آغاز ہوا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاق نے صوبوں سے آخری سہ ماہی کی متواتر مہم پر مشاورت کر لی، وفاق نے صوبوں کو آخری سہ ماہی کی مہم کے لیے بھرپور تیاری کی ہدایت کردی ہے۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ رواں ماہ قومی انسداد پولیو مہم، اکتوبر اور نومبر میں ذیلی قومی انسداد پولیو مہم جبکہ دسمبر میں پھر قومی انسداد پولیو مہم چلائی جائے گی۔

خیال رہے کہ اب تک ملک میں رواں برس پولیو کیسز کی تعداد 68 ہوچکی ہے، سب سے زیادہ پولیو کیسز خیبر پختونخواہ میں سامنے آئے جن کی تعداد 22 ہے۔

دیگر صوبوں میں سے سندھ میں 21، بلوچستان میں 17 اور پنجاب سے 4 پولیو کیسز سامنے آئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں