The news is by your side.

Advertisement

مذہبی پابندیوں کی تشویشی لسٹ کا معاملہ، امریکی حکام دفترخارجہ طلب، پاکستان کا شدید احتجاج

اسلام آباد: امریکا کی جانب سے پاکستان کو مذہبی پابندیوں کی خصوصی تشویشی لسٹ میں شامل کرنے کے واقعے  پر دفتر خارجہ نے شدید احتجاج کیا ہے.

تفصیلات کے مطابق سینئر امریکی حکام کو  دفترخارجہ طلب کیا گیا، اس موقع پر پاکستان کی جانب سے امریکی رویے پر شدید احتجاج کیا گیا.

اس موقع پر پاکستان نے امریکی حکام کو احتجاجی مراسلہ بھی سونپا، جس میں‌ موقف اختیار کیا گیا کہ پاکستان میں اقلیتوں کو آئین کے مطابق مذہبی آزادی ہے.

پاکستان نے موقف اختیار کیا کہ امریکا مقبوضہ کشمیر  میں مظالم کو کیسے نظرانداز کر سکتا ہے، بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ سلوک کو بھی نظراندازکیا گیا.

احتجاجی مراسلے میں کہا گیا کہ پاکستان کو اپنی اقلیتوں سے متعلق کسی کے لیکچرکی ضرورت نہیں.


مزید پڑھیں: امریکا نے پاکستان کومذہبی پابندیوں کی خصوصی تشویشی فہرست سے استثنیٰ دے دیا


سفارتی ذرائع کے مطابق پاکستان کا احتجاجی مراسلے میں دو ٹوک مؤقف اختیار کیا  ہے.

یاد رہے امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کا نام مذہبی آزادیوں کی غیر تسلی بخش صورت حال رکھنے والے ممالک کی فہرست میں شامل کیا تھا۔

البتہ سفارتی کوششوں کے بعد امریکاکواپنافیصلہ واپس لینا پڑگیا اور پاکستان کومذہبی پابندیوں کی خصوصی تشویشی فہرست سے استثنیٰ دے دیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں