The news is by your side.

Advertisement

ایران سے کروناوائرس پاکستان منتقل ہونے کا خطرہ ، تفتان بارڈر سیل

چاغی : ایران میں کروناوائرس سےاموات  اور دودرجن سےزائدافراد میں وائرس کی تصدیق کےبعد پاکستان الرٹ ہوگیااور  تفتان بارڈر بند کر دیا گیاجبکہ ٹرانزٹ گیٹ ، راہداری، پاسپورٹ گیٹ بھی بند ہیں۔

تفصیلات کے مطابق  قاتل کرونا وائرس بذریعہ ایران پاکستان منتقل ہونے کے  خدشے کے پیش نظر  تفتان بارڈربند سیل کردیا گیا جبکہ ایران سے وطن واپس آنے والے زائرین کی سخت اسکریننگ  کی جارہی ہے۔

پاک ایران بارڈربندہونےسےدوطرفہ کاروباری سرگرمیاں معطل ہوگئی ہے اور ہیوی ٹریفک کوتفتان میں روک دیاگیا ہے۔

ترجمان بلوچستان حکومت نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا پاک ایران سرحد بند کردی گئی ہے ، کسی کو آنے جانے کی اجازت نہیں ۔

لیاقت شاہوانی کا کہنا تھا کہ  ایران میں موجود پاکستانیوں کو سرٹیفکیٹ لینا ہوگا، ایران سے آنے والے شہریوں کو14روز آبزرویشن میں رکھا جائے گا، وزیراعلیٰ جام کمال خود صورتحال کو مانیٹر کررہے ہیں۔

چیف سیکرٹری بلوچستان نے شہریوں کے ایران جانے پر پابندی عائد کردی ہے اور کہا زائرین کو تا حکم ثانی اجازت نامے جاری نہیں ہوں گے۔

مزید پڑھیں : کرونا وائرس: پاکستانی زائرین کے ایران جانے پر پابندی عائد

چاغی انتظامیہ نےانٹری پوائنٹ پردس رکنی عملہ تعینات کررکھا ہے، ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرز اسپتال میں کرونا آئیسولیشن وارڈ بھی قائم کردیا گیا جبکہ پی ڈی ایم نے10 ہزارماسک پہنچادیئے۔

چیف سیکرٹری بلوچستان نے واضح کیا ہے کہ صورتحال میں بہتری آنے تک کسی شخص کو ایران جانے کی اجازت نہ ہوگی اور  امید ظاہر کی کہ کرونا وائرس کے حوالے سے صورتحال الارمنگ نہیں، صوبہ اورملک محفوظ ہیں تاہم حفاظتی اقدامات کرنا ضروری ہے ۔

صوبائی حکومت نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی ہے کہ ایران سے پاکستان داخل ہونے والے لوگوں کو دوہفتوں تک تفتان کیمپ میں ٹھہرایا جائے اوران کی باقاعدہ سکریننگ کا عمل جاری رکھا جائے تاکہ خطرناک وائرس پاکستان منتقل نہ ہو۔

گذشتہ روز معاون خصوصی برائےصحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا تھا کہ انٹری پوائنٹس پرعالمی ہیلتھ ریگولیشن پرعمل ہورہاہے تاحال پاکستان میں کروناوائرس کاکوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا۔

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ  وزیراعلیٰ بلوچستان خود کرونا وائرس سے بچاؤ کے اقدامات کی نگرانی کررہے ہیں۔

اس سے قبل لیاقت شاہوانی  کا کہنا تھا کہ 5 ہزارکےقریب پاکستانی زائرین ایران میں موجودہیں ، ایران میں موجود پاکستانی زائرین مارچ میں واپس آئیں گے، ایران سے بات کی جائے گی اور زائرین کو ابھی وہیں رکھاجائے، کرونا وائرس پرقابوپانے تک کوئی شخص ایران نہیں جائے گا۔

خیال رہے ایران میں کوروناوائرس سےاموات کی تعداد8ہوگئی جبکہ متاثرہ افراد کی تعداد43 تک جا پہنچی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں