The news is by your side.

Advertisement

تجارتی خسارہ 6 ارب ڈالر سے تجاوز کرگیا

اسلام آباد : رواں مالی سال کے پہلے دو ماہ میں تجارتی خسارے میں ساڑھے تینتیس فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا اور تجارتی خسارہ چھ ارب ڈالر سے تجاوز کرگیا۔

تفصیلات کے مطابق معاشی ترقی کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، بڑھتی ہوئی درآمدات کے باعث تجارت کا توازن بگڑ گیا، رواں مالی سال کے پہلے دو ماہ میں تجارتی خسارے کا حجم چھ ارب انتیس کروڑ ڈالر تک جا پہنچا، صرف اگست میں تجارتی خسارہ تین ارب بیالیس کروڑ ڈالر رہا۔

ادارہ شماریات کیجانب سے جاری اعداد وشمارکےمطابق درآمدات چوبیس فیصد اضافے کے ساتھ نو ارب اناسی کروڑ ڈالر ہوگئیں اور برآمدات میں بھی اضافہ ہوا جبکہ جولائی اور اگست میں برآمدات کا حجم تین ارب انچاس کروڑ ڈالررہا ہے۔

اعداد وشمار کے مطابق خدمات کی برآمدات میں پندرہ اعشاریہ تین فیصد اضافہ ہوا۔

معاشی ماہرین کے مطابق انفراسٹرکچرمنصوبوں کے باعث مشینری کی درآمدات بڑھ رہی ہیں تاہم سابق وزیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا ہےکہ برآمدات میں کی وجہ روپے کا اوور ویلیو ہونا ہے، عالمی مالیاتی ادارے بھی پاکستانی روپے کو اوور ویلیو قراردے چکے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں