The news is by your side.

Advertisement

رمضان میں پاکستانیوں نے خیرات و عطیات کے تمام ریکارڈز توڑ ڈالے

اسلام آباد : اس رمضان میں پاکستانیوں نے فلاحی کاموں اور عطیات میں پرانے سارے ریکارڈ توڑ ڈالے اور ایک سو ستر ارب سے زائد خیرات، عطیات اور  فلاحی کاموں پر خرچ کئے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی عوام جو سخاوت میں پیش پیش رہتے ہیں، اس رمضان بھی فلاحی کاموں میں خوب پڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور سارے ریکارڈ توڑ ڈالے، اس سال پاکستانیوں نے ایک سو پچھترارب روپے کے عطیات اور خیرات دیئے۔

اعداد وشمار کے مطابق گزشتہ سال ایک سو اٹھاون ارب روپے ماہ رمضان میں عطیات اور فلاحی کاموں میں صرف کئے گئے تھے۔

غیر ملکی تحقیقاتی اداروں کے مطابق فلاحی کاموں میں پاکستان برطانیہ اور کینیڈا جیسے ممالک کا مقابلہ کرسکتا ہے، پاکستانی ملکی جی ڈی پی کا تقریبا ایک فیصد فلاحی کاموں پر صرف کرتے ہیں جبکہ برطانیہ مجموعی ملکی پیداوار کا ایک اعشاریہ 3 فیصد، کینیڈا ایک اعشاریہ 2 فیصد فلاحی کاموں کی مد میں خرچ کرتا ہے۔

بھارت کے مقابلے میں پاکستان میں فلاحی کاموں کی مد میں خرچ کی جانے والی رقم دو گنا سے بھی زائد ہے۔

خیال رہے کہ حالیہ رپورٹ کے مطابق پاکستانی شہری سالانہ دو ارب ڈالر مالیت کے برابر عطیات دیتے ہیں۔ لیکن زیادہ تر اشیاء یا رقم اداروں کے بجائے مستحق افراد کو براہ راست دی جاتی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں