The news is by your side.

Advertisement

بھارتی کی غیر قانونی قید سے آزاد 2 پاکستانی بچے وطن پہنچ گئے

اسلام آباد: بھارت کی غیر قانونی حراست میں رہنے والے دو بچے واہگہ بارڈر کے راستے پاکستان پہنچ گیے، 10 سالہ بابر علی اور 12 سالہ علی رضا کو بھارتی حکام نے غلطی سے سرحد پار کرنے پر گرفتار کرلیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق دونوں بچوں نے غلطی سے نارووال بارڈر کراس کیا جس کے بعد بھارتی فوج نے انہیں حراست میں لیا تھا، بھارت میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے اس معاملے کو سیکریٹری خارجہ کے سامنے متعدد بار اٹھایا جس کے بعد 29 نومبر 2016 کو بچوں تک قونصلر رسائی دی گئی۔

پاکستانی ہائی کمشنر کے مسلسل احتجاج کے بعد کوشش رنگ لے آئیں اور بھارت نے غیر قانونی طور پر حراست میں لیے گئے بچوں کو رہا کردیا، رہائی کے بعد 10 سالہ بابر علی اور 12 سالہ علی رضا واہگہ کے راستے پاکستان پہنچ گئے تاہم گرفتار ہونے والے تیسرے شخص (ماموں) کو بھارتی حکام کی جانب سے رہا نہیں کیا گیا، بھارتی حکام کا کہنا ہے کہ تیسرے شخص کا مقدمہ عدالت میں چلایا جائے گا جس کے بعد اُن کے حوالے سے فیصلہ کیا جائے گا۔

واہگہ بارڈر پر بھارتی امیگریشن حکام نے بچوں کو پاکستانی اہلکاروں کے حوالے کیا۔ دفتر خارجہ کے مطابق بھارت کو بچوں کی حوالگی 10 اپریل کو کرنا تھی لیکن اس دوران بھارتی جاسوس کلبھوشن کی گرفتاری عمل میں آئے جس کے بعد حوالگی روک دی گئی تھی۔

بھارت کی جانب سے حوالگی روکنے پر پاکستانی ہائی کمیشن نے وکیل کے ذریعے بچوں کی رہائی کے لیے لیگل نوٹس اورپٹیشن دی۔

واضح رہے بچوں کی غیرقانونی قید کا معاملہ اے آروائی نیوز نے سب سے پہلے 12 مئی کو اٹھایا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں