پاکستانی فلموں‌ کو سعودی عرب میں ریلیز کی اجازت -
The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی فلموں‌ کو سعودی عرب میں ریلیز کی اجازت

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ سعودی حکومت نے اپنے ملک میں پاکستانی فلمیں ریلیز کرنے کی اجازت دے دی۔

اسلام آباد میں گفتگو کرتے ہوئے اُن کا کہنا تھا کہ حکومت شوبز کی صنعت کو ترقی دینے کے لیے پرامید ہے، ہم آئندہ2سال میں  فلمی صنعت کومنافع بخش بنادیں گے۔

فواد چوہدری نے سمندر پار پاکستانیوں کو پیش کش کی کہ وہ فلمی صنعت اور ڈرامہ انڈسٹری میں سرمایہ کاری کریں، ان شعبوں میں پیسہ لگانے والے افراد کو مایوسی نہیں ہوگی۔

یاد رہے 7 ستمبر کو سعودی عرب کے وزیر اطلاعات ڈاکٹرعوادبن صالح سرکاری دورے پر پاکستان پہنچے تھے ، اُن کا استقبال وفاقی وزیر اطلاعات فوادچوہدری نے کیا تھا۔

مزید پڑھیں: سعودی عرب میں پہلے پاکستانی انٹرنیشنل میوزک کنسرٹ کا شان دار انعقاد، شائقین کی بڑی تعداد میں شرکت

سعودی وزیر اطلاعات نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی اور انہیں ولی عہد شاہ سلمان کا خصوصی پیغام بھی پہنچایا۔ ملاقات میں سعودی عرب کی جیلوں میں قید پاکستانیوں کے مسائل پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔

سعودی وزیر نے اپنے ملک میں قید پاکستانیوں کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ حکومت مشکل کی ہر گھڑی میں پاکستانی بھائیوں کے ساتھ رہے گی۔

ڈاکٹر عواد بن صالح نے مختلف شعبوں میں ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی بھی کروائی اور کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات منفرد نوعیت کے ہیں، حکومتی سطح پر رابطوں میں اضافے سے تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔ اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے ملاقات میں سعودی وزیر اطلاعات نے مختلف شعبوں میں ہرممکن تعاون کی یقین دہانی بھی کروائی۔

یہ بھی پڑھیں: بلاک بسٹر فلم بلیک پینتھر کے ساتھ سعودی عرب میں سینما کی واپسی

خیال رہے کہ سعودی عرب میں 80 کی دہائی کے آغاز تک فلموں کی نمائش ہوتی تھی مگر سینما کو شریعت اور معاشرتی اقدار کے خلاف قرار دیتے ہوئے اسے مکمل طور پر ختم کردیا گیا تھا۔

سعودی حکومت نے گزشتہ برس روشن خیالی سے متعلق پروگرام ویژن 2022 کا اعلان کیا جس کے ساتھ سینما کی واپسی ہوئی، خواتین کو ڈرائیونگ کرنے اور اسٹیڈیم جاکر میچ دیکھنے کی اجازت بھی دی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں