The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی کوہ پیما کا بڑا کارنامہ، بڑا اعزاز پاکستان کے نام

ڈوڈوما: ارادے مصم ہوتو منزل مل ہی جاتی ہے، اس محاورے کو سچ کردکھایا ہے، پاکستان کوہ پیما اسد علی میمن نے، جنہوں نے براعظم افریقہ کی بلند ترین چوٹی کو دنوں کے بجائے گھنٹوں میں سر کرلیا ہے۔

” فروری میں افریقا کی سب سے بلند چوٹی ماؤنٹ کیلی منجارو کو چوبیس گھنٹے سے بھی کم وقت میں سر کرونگا”، لاڑکانہ سے تعلق رکھنے والے کوہ پیما اسد علی میمن نے اپنا وعدہ پورا کردیا اور براعظم افریقہ کی بلند ترین ماونٹ کیلی منجیرو صرف چودہ گھنٹے میں سر کرلی۔

ماونٹ کیلی منجیرو کی اونچائی 5,895 میٹر ہے،کوہ پیماؤں کو یہ چوٹی سر کرنے میں پانچ سے سات دن لگتے ہیں، اس کے ساتھ ہی اسدعلی میمن ریکارڈ وقت میں سمٹ کو سر والے واحد ایشیائی اور پاکستانی بن گئے۔

تاریخی موقع پر پاکستان ہائی کمیشن نے اپنے فیس بک بیج پر کارنامہ شیئر کیا اور تنزانیہ میں موجود پاکستانی سفیر محمد سلیم نے بھی اسد میمن کو مبارکباد دی۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستانی کوہ پیما اسد علی نے کیرتھر ماؤنٹین کو سر کرلیا

اس سے قبل اسد علی میمن نے ماؤنٹ ایلبرس کے بعد ماؤنٹ اکنگوا پر بھی پاکستان اور کشمیر کا پرچم لہرایا تھا، جس کے ساتھ ہی اسد علی بلند ترین پہاڑ پر 50 میٹر لمبا قومی پرچم لہرانے والے دنیا کے پہلے کوہ پیما بھی بنے تھے، مائونٹ اکنگوا 23 ہزار فٹ بلند ہے۔

نوجوان کوہ پیما نے اس سے قبل جنوبی امریکا کی آکونکاگووا چوٹی سر کی تھی۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں