The news is by your side.

نئی دہلی میں پاکستانی ہائی کمیشن کے اہلکاروں کو ہراساں کرنے کا انکشاف

اسلام آباد: بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی میں پاکستانی ہائی کمیشن کے اہلکاروں اور ان کے اہل خانہ کو ہراساں کرنے کا انکشاف سامنے آگیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں پاکستانی ہائی کمیشن کے عملے کو ہراساں کرنے کے تین تازہ واقعات سامنے آئیں، جہاں سینئر افسر کے اہل خانہ کی گاڑی کو خطرناک حادثے کے ذریعے نقصان پہنچانے کی کوشش کی گئی تو دوسری طرف ڈپٹی ہائی کمشنر کے بچوں کو اسکول جاتے ہوئے روک کر ہراساں کیا گیا۔

بھارت کا جنگی جنون، اسکول وین پر فائرنگ، ڈرائیور شہید

ذرائع کے مطابق پاک بھارت ڈپٹی ہائی کمیشن کے اعلیٰ افسران نے ملاقات بھی کی جہاں انہیں یہ باور کرادیا گیا کہ اگر یہی حالات رہے تو نئی دہلی میں کام کرنا مشکل ہوجائے گا، علاوہ ازیں پاکستان نے اس معاملے پر باضابطہ احتجاج کیا اور اس حوالے سے احتجاجی مراسلے بھی بھیج دیے گئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستانی ہائی کمیشن کے ایک سینئر افسر کی گاڑی کو مختلف جگہوں پر روک کر انہیں ہراساں کیا گیا اس دوران ان سے نازیبا زبان استعمال کرنے کی شکایت بھی سامنے آئی، اس کے علاوہ عملے کی دو گاڑیوں کے ایکسیڈنٹ کئے گئے جبکہ پاکستانی ہائی کمیشن آنے والے افراد کو بھی روکا جارہا ہے۔

ایل او سی پر بھارتی فوج کی فائرنگ سے 19 سال کا نوجوان شہید

دوسری جانب پاکستان نے اس قسم کے واقعات کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے دوٹوک موقف اختیار کیا کہ اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو نئی دہلی میں کام کرنا مشکل ہوجائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں