جندال کو پروٹوکول، پاکستانی طلباء کی جان کو خطرہ pakistani students
The news is by your side.

Advertisement

بھارتی انتہا پسندوں کی دھمکیاں، 50 پاکستانی طلبا وطن واپس

واہگہ بارڈر: بھارت حکومت انتہا پسندوں کے آگے بے بس ہوگئی، انتہا پسندوں کی دھمکیاں کے بعد پاکستانی طلباء و اساتذہ کے 50 رکنی وفد کو پاکستان واپس بھیج دیا گیا، دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ معاملہ بھارتی حکام کے سامنے اٹھایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت جانے والے پاکستانی طلبا و اساتذہ کے وفد کو بھارت میں جان کے لالے پڑ گئے، بھارتی سرکار انتہا پسندوں کے آگے بے بس دکھائی دینے لگی، دھمکیاں ملنے کے بعد طلباء کے وفد کو واہگہ کے راستے واپس بھجوادیا گیا۔

بھارتی انتہا پسندوں کی جانب سے طلباء کے دورے کا انتظام کرنے والی این جی او کو بھی دھمکیاں دی گئیں۔

یہ پڑھیں: سجن جندال کو 10 روز کا بزنس ویزا جاری کیا گیا

بچوں کو بھارت نہیں آنا چاہیے تھا، بھارتی دفتر خارجہ

اس ضمن میں بھارتی حکومت بھی شدت پسندوں کی طرف داری کرنے لگی، بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ بچوں کو بھارت نہیں آنا چاہیے تھا۔

دفتر خارجہ نے پاکستانی بچوں کے ساتھ بھارتی ناروا سلوک کا نوٹس لیا ہے، ترجمان نفیس زکریا نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت کے سامنے یہ معاملہ اٹھائیں گے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل بھارتی بزنس ٹائیکون سجن جندال جب پاکستان کے دورے پر آئے تو ان کو مری میں وی وی آئی پی پروٹوکول دیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں