The news is by your side.

Advertisement

گیارہ ماہ میں ملک پر غیر ملکی قرضوں میں 10 ارب ڈالر کا اضافہ

اسلام آباد : ملک پر قرضوں کے بوجھ میں خطرناک حد تک اضافہ ہوا،  رواں مالی سال کے گیارہ ماہ میں ملک پر قرضوں میں دس ارب ڈالر کا اضافہ ہوا جبکہ غیر ملکی قرضوں کا حجم 92 ارب ڈالر ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق ملکی معیشت کی گرتی صورت حال اور قرضوں کے بڑھتے ہوئے بوجھ نے مشکلات میں اضافہ کردیا ہے، نو ارب اٹھانوے کروڑ ڈالر میں سے ستر فیصد بجٹ خسارہ کو پر کرنے اور زرمبادلہ ذخائر بڑھانے کیلئے لئے گئے۔

اقتصادی امور ڈویژن کے جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق  گیارہ ماہ میں منصوبوں پر خرچ کرنے کیلئے صرف دو ارب اسی کروڑ ڈالر قرضہ لیا گیا، یہ قرضہ اورنج لائن، تھاکوٹ حویلیاں اور ملتان سکھر سی پیک منصوبے کیلئے لیا گیا۔

صرف چین سےگیارہ ماہ میں تین ارب اسی کروڑ ڈالر کا قرضہ لیا گیا جبکہ زیر غور عرصے میں یورپی بینکوں سے بھی پچھترکروڑ ڈالر کا قرض لیا۔

پاکستان پر غیر ملکی قرضوں کا حجم92  ارب ڈالر کی بلند ترین سطح تک جاپہنچا ہے، جو جی ڈی پی کا ستر فیصد ہے،  پاکستان میں قانونی حد ساٹھ فیصد ہے۔

قرض کے لئے پاکستان کا انحصار چین ، کمرشل بینکس اور بانڈز کی فروخت پر ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں