The news is by your side.

Advertisement

دورہ پاکستان : آسٹریلوی بیٹر عثمان خواجہ کو اپنا بچپن یاد آگیا

راولپنڈی: پاکستان کے تاریخی دورے پر پہنچنے والی آسٹریلوی ٹیم کے ٹیسٹ اوپنر عثمان خواجہ کو راولپنڈی میں گزارے بچپن کے دن یاد آگئے۔

تفصیلات کے مطابق ورچوئل پریس کانفرنس کرتے ہوئے آسٹریلوی بیٹر عثمان خواجہ نے کہا کہ بچپن میں پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں جانے کا موقع ملا تھا، کراوڈ میں بیٹھنے کی تصاویر میرے پاس آج بھی موجود ہے۔

عثمان خواجہ نے کہا کہ پاکستان میں کھیلنا میرے لیے اہم لمحہ ہے، میری ہمیشہ سے خواہش تھی کہ پاکستان میں کھیلوں، پاکستان میں پیدا ہونا اور پھر پاکستان میں تاریخی ٹیسٹ میچ کھیلنا میرے لیے اہم ہے۔

عثمان خواجہ نے کہا کہ میں بارہ سال میں پاکستان میں اپنی فیملی کے ساتھ چار بار دورہ کر چکا ہوں، 2010 میں پاکستان میں اپنی فیملی کے ساتھ آخری بار آیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں پیدا ہوا تھا لیکن دل میرا آسٹریلیا کے ساتھ ہے کیونکہ آسٹریلیا میں پلا بڑھا ہوں، جب بڑا ہورہا تھا تو دل یہی تھا کہ آسٹریلیا کے لیے کھیلوں اور اب پاکستان سے آکر آسٹریلیا کے لیے نمائندگی کرنا تاریخی لمحہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستان سپر لیگ کا کامیاب انعقاد، پی سی بی مالا مال

آن لائن پریس کانفرنس میں عثمان خواجہ نے کہا کہ آسٹریلیا کبھی پاکستان میں نہیں کھیلا اس لئے نیا تجربہ ہوگا، راولپنڈی کی پچ فاسٹ بولرزکے لئے سازگارہوتی ہے لیکن اس بارمختلف پچ کی امید ہے۔

آسٹریلوی بیٹر نے کہا کہ میں نےصبح ایچ بی ایل پی ایس ایل فائنل کی جھلکیاں دیکھیں، ایچ بی ایل پی ایس ایل 7میں بہترین ٹیم فاتح قرار پائی۔

عثمان خواجہ نے قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کو دنیا کا بہترین کرکٹر قرار دیتے ہوئے کہا کہ بابراعظم نے بابراعظم نے گزشتہ سال بہترین کارکردگی دکھائی جبکہ محمد رضوان بھی پاکستان کے لیے فارم میں ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں