site
stats
عالمی خبریں

فلسطینی صدرکا اسرائیل سے رابطے منجمد رکھنے کا اعلان

israel

یروشلم : فلسطینی صدرمحمودعباس نے اسرائیل سے رابطے بدستورمنجمد رکھنے کا اعلان کیا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ پراناسیکورٹی نظام بحال کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیل کے متنازعہ اقدامات اورظالمانہ کارروائیوں کیخلاف فلسطینوں کا احتجاج جاری ہے، شدید احتجاج کے بعد مسجداقصی کے قریب سے میٹل ڈیٹیکٹر ہٹانے کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے فلسطینی صدرمحمودعباس نے اسرائیل سے رابطے معطل رکھنے کا اعلان کردیا۔

محمودعباس نے اسرائیل سے مطالبہ کیا ہے کہ میٹل ڈیٹکٹرہٹانا کافی نہیں،10روز قبل والاسیکیورٹی نظام بحال کیا جائے۔

گذشتہ روز اسرائیل نے قبلہ اول کے داخلی مقام سے میٹل ڈی ٹیکٹر ہٹانے کا اعلان کیا اور کہا تھا کہ میٹل ڈیٹیکٹر کی جگہ سیکیورٹی کیمرے نصب کیے جائیں گے۔

یاد رہے کہ 14 جولائی کو فلسطینی حملہ آور نے فائرنگ کر کے 2 اسرائیلی پولیس گارڈز کی ہلاک کردیا تھا ، جس کے بعد اسرائیل نے مسجد اقصیٰ میں میٹل ڈیٹیکٹرز نصب کردئیے تھے، جس کے بعد ہزاروں فلسطینیوں نے شدید احتجاج کیا تھا۔

اسرائیلی فورسزکی فائرنگ سے پانچ فلسطینی شہید ہوگئے تھے۔


فلسطینی صدر نے اسرائیل سے تمام رابطے معطل کردیئے


واضح رہے کہ فلسطینی صدر محمود عباس نے اسرائیل کے ساتھ سرکاری رابطے معطل کرنے کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ اسرائیلی فورسز جب تک مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینیوں پر ظلم اور تشدد کا باب ختم نہیں کرتی اور بالخصوص قبلہ اول اور بیت المقدس میں فلسطینیوں پر عاید کردہ پابندیاں نہیں اٹھاتے اس وقت تک اسرائیل کیساتھ تمام سرکاری رابطے معطل رہیں گے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top