سپریم کورٹ کا فیصلہ پاکستانی آئین کے مطابق درست ہے:عالمی مصالحت کار -
The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ کا فیصلہ پاکستانی آئین کے مطابق درست ہے:عالمی مصالحت کار

ہیگ : نواز شریف کی نااہلی سے مطعلق پاکستانی عدالتوں کا فیصلہ پاکستان کے آئین کے عین مطابق ہے اور قانون کی بالادستی ہی ریاستوں کے استحکام کا باعث ہوتی ہے۔

اس بات کا اظہار بین الاقوامی تنازعات میں ثالثی کے عالمی ماہر فیصل محمد نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو میں کہی۔

انھوں نے کہا کہ چند ایشائی ممالک میں کمزور جمہوریت اور قانون میں سقم کی وجہ سے ان ممالک کے اکثر سیاسی خاندان مالی بد عنوانیوں کے مرتکب پائے گئے جن میں پاکستان کے سابقہ وزیر اعظم بھی شامل ہیں ۔

فیصل محمد کے مطابق نواز شریف پارلیمنٹ کے فلور سمیت دیگر معاملات میں بھی کئی بار متضاد بیانی اور کئی اہم معلومات خفیہ رکھنے کے مرتکب ہوئے جو کہ نہ صرف پاکستانی آئین بلکہ کئی دیگر ممالک کے قوانین میں بھی قابل گرفت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ یہ فیصلہ پاکستان سے بدعنوانی اور دہشت گردی کو ختم کرنے میں انتہائی معاون ثابت ہوگا کیونکہ دنیا میں ہرجگہ دہشت گردی کے پیچھے منی لانڈرنگ اور بدعنوانی ہی سب سے بڑی وجہ پائی گئی ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز سپریم کورٹ کے پانچ ججز پر مشتمل لارجر بنچ نے پاناما کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کو نا اہل قرار دیا تھا جس کے بعد انہوں نے عہدہ چھوڑدیا۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں