site
stats
پاکستان

پاناماکیس، وزیراعظم کے بیٹے حسین نوازکی طلبی کا نوٹس آج جاری ہونے کا امکان

اسلام آباد : پاناما کیس کی تحقیقات کیلئے بنائی گئی جے آئی ٹی نےایک اور بڑافیصلہ کرلیا ہے، جے آئی ٹی پاناماالزامات کی تفتیش کیلئے وزیراعظم نوازشریف کو طلب کرے گی ، وزیراعظم کے بیٹے حسین نواز کی طلبی کا نوٹس آج جاری ہونے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق پانامالیکس کی تحقیقات کیلئے جے آئی ٹی کا اجلاس ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے واجد ضیا کی سربراہی میں جاری ہے، ٹیم تفتیش کیلئے وزیراعظم ہاؤس نہیں جائے بلکہ پوچھ گچھ کیلئے وزیراعظم نوازشریف کے صاحبزادے حسین جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم کے سامنے پیش ہوں گے، نوٹس آج سوالنامے کے ساتھ بھیجےجانے کا امکان ہے۔

زرائع کے مطابق چھ رکنی ٹیم طلبی نوٹس کے ساتھ پاناما الزامات سے متعلق سوالنامہ بھی ارسال کرے گی، حسین نواز حل شدہ کاپی لیکر سات روز میں جوابات کے ساتھ جے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوں گے۔

دوسری جانب وزیراعظم کے بیٹے حسین نواز اور کزن طارق شفیع نے سپریم کورٹ نےتشکیل دی گئی، جے آئی ٹی پر پندرہ روز بعد اعتراض اٹھاتے ہوئے درخواست دائر کردی، جس میں کہا گیا تھا کہ جےآئی ٹی ارکان میں سے ایک مشرف کاقریبی ساتھی جبکہ دوسرا پی ٹی آئی کا حمایتی ہے۔


مزید پڑھیں : پاناما کیس: وزیراعظم اور ان کے بیٹوں‌ کو طلب کرنے کا فیصلہ


جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں تین رکنی بنچ انتیس مئی کو اعتراضات کا جائزہ لے گی۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز پاناما کیس کی جے آئی ٹی نے وزیراعظم حسن اور حسین نواز کو طلب کرنے کا فیصلہ کیا تھا، سپریم کورٹ نے جے آئی ٹی کے دو ارکان پر حسین نواز اور طارق شفیع کی جانب سے اعتراضات مسترد کردیے تھے اور جے آئی ٹی کو کام جاری رکھنے کا حکم دیا تھا۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک  وال پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top