پاناما کیس ، شریف خاندان کے بیانات میں تضادات ، جے آئی ٹی کا سوالنامہ تیار -
The news is by your side.

Advertisement

پاناما کیس ، شریف خاندان کے بیانات میں تضادات ، جے آئی ٹی کا سوالنامہ تیار

اسلام آباد : پانامہ کیس میں شریف خاندان بیانات میں تضادات پر جے آئی ٹی نے سوالنامہ تیار کر لیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پانامہ کیس کی تحقیقات میں شریف خاندان کے افراد کے متضاد بیانات پر جے آئی ٹی نے سوالنامہ تیار کر لیا ہے ، جس کے مطابق وزیر اعظم کے بچوں اور طارق شفیع سے حتمی بیانات لیے جائیں گے اور جے آئی ٹی ارکان متضاد بیانات سےمتعلق سوالات پوچھے گی۔

سوالنامے کے مطابق منی ٹریل کے ٹھوس شواہد دینے میں تاحال ناکام ہیں، منی ٹریل سے متعلق جے آئی ٹی میں بیانات شریف خاندان کے افراد کے سامنے رکھے جائیں گے۔

ذرائع کے مطابق جے آئی ٹی حدیبیہ پیپر مل کیس میں اسحاق ڈار کے 164بیان کو بنیا د بنا رہی ہے، جے آئی ٹی شریف خاندان سےحتمی بیانات لینے کے بعد رپورٹ مرتب کرے گی اور اپنی حتمی رپورٹ 10جولائی کو سپریم کورٹ میں پیش کرے گی۔


مزید پڑھیں : پاناما جے آئی ٹی نے وزیراعظم نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز کو طلب کر لیا


یاد رہے کہ پاناما کیس کی تحقیقات آخری مراحل میں داخل ہوچکی ہے، جے آئی ٹی نے وزیراعظم کے کزن، بھائی، بیٹوں اور داماد کے بعد بیٹی مریم نوازکو بھی 5 جولائی کو طلب کرلیا ہے۔

مریم نواز کے علاوہ تین جولائی کو چھوٹے صاحبزادے حسن نواز اور چار جولائی کو حسین نواز تفتیش کاروں کے سامنے پیش ہوں گے جبکہ دو جولائی کو وزیراعظم کے کزن طارق شفیع پیش ہوں گے۔

واضح رہے کہ حسین نواز اس سے قبل 5بار جبکہ حسن نواز 2بار جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو چکے ہیں ، اس کے علاوہ وزیر اعظم نوازشریف ، وزیر اعلیٰ پنجاب شہبازشریف ، وزیر اعظم کے داماد کیپٹن (ر) صفدر بھی جے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوچکے ہیں۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں