site
stats
پاکستان

آج 81ویں پیشی ہے لیکن پاناما لیکس کا مقدمہ ابھی تک وہیں کھڑا ہے، فواد چوہدری

اسلام آباد : پی‌ ٹی آئی رہنما فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ آج 81ویں پیشی ہے لیکن پاناما لیکس کا مقدمہ ابھی تک وہیں کھڑا ہے، قطرکے ایسے شہزادے کو12ملین درہم دیئے گئے جس سے کبھی ملے ہی نہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاناما کیس کی سماعت کے وقفے کے دوران سپریم کورٹ کے باپر پی ٹی آئی رہنما فواد چوہدری نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ آج 81ویں پیشی ہے، سوال اور جواب وہیں پر کھڑے ہیں، جب جائیداد آپ کی ہے تو وہ آپ نے خریدی کہاں سے، عدالت نے پوچھا حسین نواز جائیداد کے کیسے مالک بنے، سلمان اکرم راجہ نے کہا فلیٹس حوالگی کے دستاویزات ہمارے پاس نہیں.

فواد چوہدری نے کہا کہ سادہ سا سوال ہے وزیراعظم نے جائیداد خریدی تو ڈیکلیئر کیوں نہیں کی،سلمان اکرم راجہ نے تسلیم کیا کیس میں بہت سے خلا ہیں، 12 ملین درہم کی انویسٹمنٹ ملینز ڈالر میں تبدیل ہوگئی، 34 ملین ڈالرکی رقم التوفیق بینک کو کیوں جمع کرائی.

انھوں‌ نے مزید کہا کہ مریم نواز مالک نہیں ہیں تو اس کا ثبوت کیا ہے، پاناما لیکس کا مقدمہ ابھی تک وہیں کھڑا ہے،1988میں نوازشریف نے ایل ڈی اے کے پلاٹس اپنے دوستوں کو دے دیئے۔

پاناما کہانی بڑھتی چلی جارہی ہے ، جوابات انکے پاس نہیں ہیں، عارف علوی

پی ٹی آئی رہنما عارف علوی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا حقائق پرپردہ ڈالنے کے لئے قطری خط لائے جارہے ہیں، 1980 کے بعد ان کے پاس کوئی ریکارڈ موجود نہیں، فارمیسی پر سزا بڑھا کر پیسہ بڑھا دیا گیا ہے،

انکا مزید کہنا تھا کہ جج صاحب نے سوال کیا بچے دو ہیں تو فلیٹس 4کیوں ہیں، بچے پڑھنے گئے تھے تو 2فلیٹس ہی کافی تھے۔

عارف علوی نے کہا کہ پہلی بار کیس میں خاندان کے کسی تیسرے فرد کا نام آیا ہے، 1980کے بعد سے کیش ٹرانزیکشن شروع ہوجاتی ہے، یہی قطری نوازشریف کیخلاف ہیلی کاپٹر کیس میں سامنے آیا تھا۔فواد

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top