The news is by your side.

Advertisement

پاناماکیس کے فیصلے کی کاپی چھ اداروں کوبھجوا دی گئی

اسلام آباد : پاناماکیس کےفیصلے کی کاپی چھ اداروں کوبھجوا دی گئی، سپریم کورٹ نے اداروں سےجےآئی ٹی کیلئے اپنے نمائندے کا نام دینےکی ہدایت کی ہے۔     

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے پاناما کیس میں جے آئی ٹی بنانے کا حکم دیتے ہوئے چھ اداروں کے ارکان کو شامل کرنے کی ہدایت کی تھی، ذرائع کےمطابق جن اداروں کے نمائندوں کوجے آئی ٹی میں شامل کرنا ہے، اُن چھ اداروں کو پاناماکیس کےفیصلے کی کاپی کوبھجوا دی گئی ہے۔

زرائع کے مطابق پاناما کیس کے فیصلے کی کاپی ایف آئی اے، نیب، آئی ایس آئی،ایم آئی، اسٹیٹ بینک اور ایس ای سی پی کو بھجوائی گئی ہے، سپریم کورٹ نے سات روز میں متعلقہ اداروں کو اپنے ایک ایک نمائندے کا نام عدالت بھیجنے کاحکم دیا ہے۔


مزید پڑھیں : جے آئی ٹی کیا ہے اور کیسے تحقیقات کرتی ہے؟


کمیٹی پندرہ روز کے بعد پیش رفت عدالت میں جمع کرائے گی، ساٹھ روز میں مکمل رپورٹ دینے کی پابند ہے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے پاناما پیپرز کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے نیب، ایف آئی اے، اسٹیٹ بینک، آئی ایس آئی اور ایم آئی کے افسران پر مشتمل مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دینے کا حکم دیا تھا۔


مزید پڑھیں : جے آئی ٹی کا سربراہ کون ہوگا؟؟دو نام سامنے آگئے


دوسری جانب پاناما کیس میں وزیراعظم اور ان کے بچوں سے تفتیش کے لیے بننے والی جے آئی ٹی کی سربراہ کیلئے دو نام سامنے آئے ہیں، جن میں یف آئی اے میں 2 ایڈیشنل ڈائریکٹر احمد لطیف اور واجد ضیا شامل ہیں،جے آئی ٹی کے سربراہ کے نام کی حتمی منظوری چوہدری نثار دیں گے جس کے بعد ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے یہ نام سپریم کورٹ آف پاکستان کو بھیجیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں