The news is by your side.

Advertisement

آسٹریلوی ملک نے بھارت کو دھوکہ باز قرار دے دیا، فضائی سفر بند

آسٹریلوی ملک نے بھارتی سفیر کی جانب سے غلط بیانی اور دھوکہ دینے پر بھارت سے آنے والی پروازوں پر پابندی عائد کردی ہے۔

پاپوا نیوگینی نے بھارتی سفیر پر کوویڈ19 سے متعلق سفری قواعد کی بظاہر خلاف ورزی پر دھوکا دہی کا الزم عائد کرتے ہوئے بھارت کی پروازوں پر غیر معینہ مدت کے لیے پابندی عائد کردی۔

مقامی کی رپورٹ کے مطابق آسٹریلوی ملک پاپوانیوگینی کے کوویڈ-19 سے متعلق اعلیٰ عہدیدار کا کہنا تھا کہ جان بوجھ کر ہونے والی دھوکا دہی کے عمل میں بھارتی ہائی کمیشن نے درجنوں ایسے افراد کی مدد کی ہے جو سفر کرنے کے مجاز نہیں تھے جن میں چند کوویڈ متاثرہ بھی تھے لیکن وہ پاپوا نیوگینی پہنچے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بھارت سے گزشتہ روز براستہ انڈونیشیا 111 افراد پاپوا نیوگینی پہنچے جن میں منظور شدہ فہرست سے 30 افراد زائد تھے۔

دونوں ممالک کے حکام کے درمیان پرواز کے حوالے سے کشیدہ مذاکرات ہوئے اور پاپوا نیو گینی نے81 مسافروں کو داخلے کی اجازت کا معاہدہ طے پانے تک کورونا وائرس کے خدشے کے باعث پرواز میں موجود مسافروں کا داخلہ مسترد کردیا تھا۔

پاپوا نیو گینی کے حکام کا کہنا تھا کہ پورٹ مورسبے میں قائم بھارتی ہائی کمیشن نے جان بوجھ پر دھوکا دینے میں ساتھ دیا تاکہ مطلوبہ تعداد سے زیادہ افراد کو یہاں لایا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاپوا نیوگینی کی حکومت اور عوام کے خلاف جان بوجھ کر بدتمیزی کرنے کے نتیجے میں اب بھارت سے مزید پروازوں پر غیر معینہ مدت تک پابندی ہوگی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق پورٹ مورسبے اور نئی دہلی میں موجود بھارتی عہدیداروں نے ان الزامات کے حوالے سے کوئی ردعمل نہیں دیا۔

پاپوا نیوگینی کے عہدیدار نے کہا کہ ایئرلائن آپریٹر کیپاجیٹ اور گاروڈا انڈونیشیا پر بھی پاپوا نیو گینی کی حدود میں داخلے پر تاحکم ثانی پابندی عائد کی جاچکی ہے۔ رپورٹ کے مطابق بھارت سے آنے والے کوویڈ19 متاثرہ مریضوں میں پاپوا نیوگینی، بھارت اور انڈونیشیا کے شہری شامل تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں