The news is by your side.

Advertisement

پارک لین ریفرنسز، آصف زرداری پر فردِ جرم عائد کرنے کی کارروائی جولائی تک مؤخر

اسلام آباد : احتساب عدالت نے پارک لین ریفرنسز میں آصف علی زرداری پرفرد جرم کی کارروائی 7 جولائی تک موخر کردی جبکہ سابق صدر اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کرلی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں منی لانڈرنگ اورپارک لین ریفرنس سے متعلق سماعت ہوئی، جج محمد بشیر نے سماعت کی، دوران سماعت آصف علی زرداری اورفریال تالپور کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ عمر رسیدہ لوگ کوروناکازیادہ شکارہوسکتے ہیں، میرے موکلان کی عمریں 60سال سے زائد ہیں اور ڈبلیوایچ او نے بھی کہا لاک ڈاؤن کیا جائے۔

عدالت نے آصف زرداری اور فریال تالپور کی آج حاضری سےاستثنیٰ کی درخواست منظور کرتے ہوئے کہا جوملزمان نہیں آ سکتے ان کاویڈیو بیان ریکارڈکر لیں گے۔

احتساب عدالت نے پارک لین کیس میں آصف زرداری پر فردجرم کی کارروائی 7 جولائی تک مؤخر کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

یاد رہے کہ جعلی اکاؤنٹس کیس میں پہلا نیب ریفرنس باقاعدہ سماعت کے لیے 4 اپریل 2019 کو مقرر کیا گیا تھا، احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے سماعت کی، عدالت نے جن افراد کو طلب کیا تھا ان میں آصف زرداری کے قریبی ساتھی یونس قدوائی، کے ایم سی کے چار سابق اور چار اس وقت کے موجودہ افسران شامل تھے۔

جعلی اکاؤنٹس کیس میں گرفتار عبدالغنی مجید سمیت 7 ملزمان نے 10 ارب 66 کروڑ روپے کی پلی بارگین بھی کی ہے، ملزمان نے سندھ اور اسٹیل ملز کی سرکاری زمینوں میں خرد برد کی تھی۔

خیال رہے آصف زرداری اور فریال تالپور پر جعلی اکاؤنٹس سے منی لانڈرنگ کاالزام ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں