The news is by your side.

Advertisement

پانامہ پیپرز،پارلیمانی کمیٹی کےابتدائیے پر حکومت و اپوزیش کا اتفاق

اسلام آباد : پانامہ پیپرز پر تحقیقات کے لیے تشکیل دی گئی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس آج اسلام آباد میں ہوا،جس میں حکومتی اور اپوزیشن کمیٹیوں نے معمولی اختلاف کے ساتھ پارلیمانی کمیٹی کے ابتدائیے پر اتفاق کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق پانامہ پیپرز پر وزیرَ اعظم کے بچوں کے نام آنے پر تحقیقات کے لیے بنائی گئی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا،جس میں حکومتی کمیٹی اور اپوزیشن کی کمیٹی کے درمیان معمولی نوک جھونک کے ساتھ پارلیمانی کمیٹی کے ابتدائیہ پر اتفاق کر لیا گیا، جس کے تحت کل سے کمیٹٰی “ٹی او آرز” کا شق وار جائزہ لے گی،جب کہ اپوزیشن کے 15 سوالوں میں 2 سولات بھی حذ ف کر دیے گئے ہیں۔


حکومت اوراپوزیشن کا مشترکہ کمیٹی کی تشکیل پراتفاق


پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے متحدہ اپوزیشن کے لیڈر چوہدری اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ حکومت کا اپنے “ٹی او آرز” پر بے جا اصرار کر رہی ہے حالانکہ حکومتی “ٹی او آرز” کو تو سپریم کورٹ بھی مسترد کر چکی ہے۔

چوہدری اعتزاز احسن نے واضع کیا کہ اپوزیشن نے کھلے ذہن اور فراغ دلی کے ساتھ اجلاس میں شرکت کی،جس کا ثبوت یہ ہے کہ اپوزیشن نے ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے 15 سوالوں میں سے 2 سوالوں کو نکالنے کے لیے بھی تیار ہو گئی ہے ہیں، لیکن حکومت کو بھی اپنے ٹی او آرز اصرار سے پیچھے ہٹنا ہو گا۔

تاہم اس موقع پر تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی نے کہا کہ 15 سوالات بے معنی نہیں ،ہر سوال کے پیچھے کوئی نہ کوئی قانون شکنی ہے،جس کا جواب قوم جاننا چاہتی ہے،ہم کسی ایسے عمل سے نہیں گذریں گے جس سے ہامرے اصولوں پر ضرب پڑتی ہو۔

Saad

بعد ازاں پارلیمانی کمیٹی کے حکومتی ممبر اور وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کی روداد بتاتے ہوئے کہا پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس خوش گوار ماحول میں ہوا، ہمارا پہلے بھی یہی موقف تھاکہ ضابطہ کار پر مذاکرات ہونے چاہیے،ابہام کے بجائے اتفاق رائے سے آگے بڑھنا چاہیے۔


قومی اسمبلی،پاناماپیپرز پرپارلیمانی کمیٹی کا قیام 


چوہدری اعتزاز کے حکومتی ’’ٹی او آرز‘‘ پر اُٹھائے گئے اعتراض پر خوجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے حکومتی ’’ٹی او آرز‘‘ کو مسترد نہیں کیا بلکہ کمیشن کی تشکیل کے لیے آئینی راستہ وضع کرنے کا کہا تھا۔

حکومتی کمیٹی اور اپوزیشن کی کمیٹی نے آج کے اجلاس پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اس بات کا اعلان کیا کہ کل سے ہونے والے مذاکرات میں ’’ٹی او آرز‘‘ پر شق وار تبادلہ خیال کیا جائے گا،جس سے لگتا ہے کہ معاملات درست سمت میں جا رہے ہیں۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس کے بعد لگتا یوں ہے کہ حکومت اور اپوزیشن ٹیمیں ایک ساتھ ورکنگ ریلیشن قائم کرنے پر تیار ہیں.تاہم ثوہدری اعتزاز احسن کے قدرے نرم لب و لہجہ اس کے برعکس تحریک انصاف کے شاہ محمود قریشی کے دوٹوک موقف سے اپوزیشن کمیٹی ابہام کا شکار نظر آتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں