The news is by your side.

Advertisement

افغانستان میں پارلیمانی انتخابات کا اعلان کر دیا گیا

کابل: طویل جنگ اور شدید سیاسی بحران کا شکار افغانستان نے تین سال کی تاخیر کے بعد ملک میں پارلیمانی انتخابات کا اعلان کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق افغان الیکشن کمیشن کی جانب سے ملکی قانون ساز اسمبلی (پارلیمنٹ) کے لیے انتخابات کا اعلان کر دیا گیا ہے جس کے تحت پارلیمانی انتخابات رواں سال اکتوبر میں منعقد کیے جائیں گے۔

افغانستان میں پارلیمانی انتخابات 2015 میں ہونا تھے تاہم صدارتی انتخابات کے بعد پیدا ہونے والی سیاسی صورت حال کے باعث اسے  مسلسل موخر کیا جاتا رہا لیکن اب الیکشن کمیشن نے حتمی فیصلہ لیتے ہوئے انتخابات رواں برس اکتوبر میں کرانے کا اعلان کر دیا ہے۔

عوام الیکشن میں بھرپور حصہ لیں، افغان صدر کرزئی

افغانستان کے پارلیمانی انتخابات میں 249 نشتوں کے لیے نمائندوں کا انتخاب کیا جائے گا جبکہ منتخب ہونے والے اراکین کی مدت پانچ برس ہوگی، علاوہ ازیں چار سو اضلاع میں علاقائی انتخابات بھی اسی سال منعقد ہوں گے۔

دوسری جانب افغان الیکشن کمیشن کے سربراہ گلا جان عبد البدیع صیاد کا کہنا تھا کہ افغانستان کی صورت حال انتہائی سنگین ہے ایسے حالات میں انتخابات کرانا ایک مشکل کام  ہے، تاہم الیکشن کے لیے ووٹرز کی رجسٹریشن کا عمل رواں ماں شروع کر دیا جائے گا۔

افغانستان میں الیکشن کمیشن پرحملہ،5افراد ہلاک

خیال رہے کہ افغانستان میں آئندہ صدارتی انتخابات اپریل 2019 میں منعقد کیا جائے گا تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ افغان حکومت کی سکیورٹی صلاحیت انتہائی کمزور ہے جس کے باعث خیال یہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ حکومت انتخابات کا انعقاد کرانے کی صلاحیت نہیں رکھتی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں