The news is by your side.

Advertisement

پروین رحمان کی خدمات کا اعتراف، گوگل کا ڈوڈل کراچی کی بیٹی کے نام

کراچی : شہر قائد کی محرومیوں کا درد رکھنے والی اس شہر کی بیٹی پروین رحمان کو اس دنیا سے رخصت ہوئے8برس بیت گئے، ان کی کارکردگی اور ان کے خلوص کا گوگل بھی معترف ہوگیا۔

ان کی سماجی خدمات اور قربانی کی بدولت دنیا کے مقبول ترین سرچ انجن گوگل نے آج اپنا ڈوڈل پاکستان کی سماجی کارکن پروین رحمان کے نام کردیا گوگل نے یہ خراجِ عقیدت پروین رحمان کی 65 ویں سالگرہ کے موقع پرکیا ہے۔

خیال رہے کہ 13 مارچ 2013 کو سماجی کارکن پروین رحمان کو کراچی کے منگھو پیر روڈ پر اپنے دفتر جاتے ہوئے ایک موٹر سائیکل پر سوار دو افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔

سماجی کارکن پروین رحمان کو گوگل کا خراج عقیدت - Naibaat

 ایک روز بعد پولیس تحقیقات کے سلسلے میں تحریک طالبان پاکستان کے مقامی رہنما قاری بلال کو گرفتار کرنے پہنچی تو وہ جعلی مقابلے میں مارا گیا تھا، جس کے بعد کیس کی فائل بند ہوگئی تھی۔

بعد ازاں سپریم کورٹ نے اپریل 2015 میں اس کیس کا از خود نوٹس لیتے ہوئےتحقیقات دوربارہ کرنے کا حکم جاری کیا تھا جس پر ایک جے آئی ٹی تشکیل دی گئی جس نے رحیم سواتی کو خیبرپختون خواہ کے علاقے سے گرفتار کیا اور پھر اُس نے تفتیش کے دوران پروین رحمان کے قتل کا اعتراف بھی کیا۔

پروین رحمان نے ایک صحافی کو دیے گئے اپنے آخری انٹرویو میں بتایا تھا کہ انہیں لینڈ گریبر اور دیگر جرائم پیشہ افراد کی جانب سے ہراساں اور سنگین نتائج کی دھمکیاں موصول ہورہی ہیں۔

عدالت نے مقدمے میں گرفتار سیاسی جماعت کے 3 کارندوں کے اعتراف اور جرم ثابت ہونے پر انہیں 57 سال 6 ماہ قید کا حکم دیا، جن میں احمدخان عرف، امجدحسین اور ایازسواتی شامل ہیں۔

مزید پڑھیں : پروین رحمان قتل کیس کا فیصلہ جاری، مجرمان کو دو بار عمر قید

گرفتار مجرم رحیم سواتی کو 50سال قید اور بیٹے عمران کو سہولت کاری کرنے پر 7 سال 6 ماہ قید کی سزا سنائی۔ جج نے مقدمےکا فیصلہ عدالتی اوقات ختم ہونےکے بعد رات گئےسنایا، اس دوران میڈیا کو بھی کمرہ عدالت میں جانے سے روکا گیا۔ مزید برآں عدالت نے تمام مجرموں پر 3 لاکھ روپے سے زائد کا جرمانہ بھی عائدکیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں