The news is by your side.

Advertisement

پروین رحمان قتل کیس: نئی جے آئی ٹی قائم کرنے کا اعلان، نوٹیفکیشن جاری

کراچی: معروف سماجی کارکن اورنگی پائلٹ پروجیکٹ کی ڈائریکٹر پروین رحمان کے قتل سے متعلق ازسرنو تحقیات کے لیے نئی جے آئی ٹی قائم کرنے کا اعلان کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے ارونگی ٹاؤن میں قتل کی جانے والی اورنگی پائلٹ پروجیکٹ کی سربراہ پروین رحمان کے کیس میں نئی پیش رفت ہوئی جس کے تحت اب کیس کی ازسرنو تحقیقات کے لیے نئی جے آئی ٹی قائم، نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔

پروین رحمان قتل کیس کا مرکزی ملزم رحیم سواتی گرفتار

محکمہ داخلہ سندھ کے مطابق کمیٹی میں حساس اداروں کے اہلکار، رینجرز اور سی ٹی ڈی کے افسران شامل ہوں گے۔ کمیٹی کی سربراہی ایس ایس پی ویسٹ کے سپرد کی گئی ہے۔

محکمہ داخلہ سندھ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی 15 روز میں اپنی رپورٹ جمع کرائے گی، کمیٹی میں مبینہ طور پر کیس کا رخ تبدیل کرنے کا معاملہ بھی زیر غور آئے گا جس کی باریکی سے تحقیقات کی جائے گی۔

ترجمان کے مطابق کمیٹی میں اسپیشل برانچ اور ایف آئی اے کے افسران بھی شامل ہوں گے جو 15 روز میں تحقیقات مکمل کرنے کے بعد اپنی رپورٹ جمع کرائیں گے۔

پروین رحمان قتل کیس کا مرکزی ملزم گرفتار

خیال رہے اورنگی پائلٹ پروجیکٹ کی سربراہ پروین رحمان کو 2013 میں اس وقت قتل کیا گیا جن وہ اپنے دفتر سے گھر کے لیے جا رہی تھیں ، ملزمان نے ان کی گاری کو بنارس کے قریب نشانہ بنایا جس میں وہ جانبر نہ ہو سکیں۔

بعد ازاں متعدد گرفتاریاں عمل میں آئیں، گذشتہ سال پروین رحمان قتل کیس کے مرکزی ملزم رحیم سواتی کو منگھو پیر سے حراست میں لے لیا تھا جو کہ اے این پی کے ٹکٹ پر کونسلر بھی رہ چکا تھا اور جس کے تحریک طالبان سے بھی تعلقات تھے.


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں