پرویز مشرف کسی بھی وقت پاکستان پہنچ سکتے ہیں: اے پی ایم ایل
The news is by your side.

Advertisement

پرویز مشرف کسی بھی وقت پاکستان پہنچ سکتے ہیں: اے پی ایم ایل

کراچی: آل پاکستان مسلم لیگ کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر محمد امجد خان نے کہا ہے کہ سابق صدر مملکت اور سپہ سالار پرویز مشرف کسی بھی وقت پاکستان پہنچ سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس کی سربراہی میں پرویز مشرف کی واپسی سے متعلق کیس زیر سماعت ہے تاہم اب تک ان کی جانب سے حمتی فیصلہ نہیں کیا گیا کہ وہ کب وطن واپس آئیں گے۔

مرکزی رہنما اے پی ایم ایل کا کہنا ہے کہ پرویز مشرف کی وطن واپسی کی تیاریاں آخری مراحل میں ہیں، سفر کے انتظامات مکمل کیے جارہے ہیں اور فلائٹس کا جائزہ بھی لیا جارہا ہے۔


پاکستان جانے کا فوری کوئی ارادہ نہیں، چند روز میں فیصلہ کروں گا، پرویز مشرف


ان کا مزید کہنا تھا کہ گذشتہ دنوں نادرا کی جانب سے پرویز مشرف کا شناختی کارڈ بلاک کیا گیا تھا جس کے باعث ان کا پاسپورٹ بھی منسوخ ہوگیا تھا تاہم ابھی تک ان کا پاسپورٹ ان بلاک نہیں ہوا۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز سپریم کورٹ میں چیف جسٹس کی سربراہی میں پرویز مشرف کی واپسی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی ، جس کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ مشرف کل دوپہر 2 بجے تک عدالت میں پیش ہوں ورنہ قانون کے مطابق فیصلہ کردیا جائے گا۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ عدالت پہلے ہی واضح کرچکی کہ واپسی کے لیے مشرف کی شرائط کے پابند نہیں، سابق صدر واپس آئیں گے تو انہیں تحفظ دے سکتے ہیں مگر اس گارنٹی کو سپریم کورٹ لکھ کر دینے کی پابند نہیں ہے۔

جسٹس ثاقب نثار کا ریمارکس میں مزید کہنا تھا کہ مشرف کمانڈو ہیں تو پاکستان آکر دکھائیں اور سیاستدانوں کی طرح میں آرہا ہوں کی گردان مت کریں، مشرف نہ آئے تو کاغذات کی جانچ پڑتال نہیں ہونے دیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں