The news is by your side.

Advertisement

ہمارا فرانزک آڈٹ ہو چکا، جن کا ہونا ہے وہ فکر کریں، پرویزرشید

لاہور : وفاقی وزیراطلاعات سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہےکہ کیا عمران خان میں اتنی اخلاقی جرات ہے کہ وہ مشرف سے پوچھتے جب وہ ہاتھ باندھ کرریفرنڈم میں کھڑےتھے؟

انہوں نے کہا کہ شریف فیملی کی تین نسلوں کو ملک بدر کیا گیا۔ان کے مال و اسباب اور گھر پر قبضہ کیا؟ ہمارا فرانزک آڈٹ ہو چکا، جن کا ڈی این اے ہونا ہے وہ فکر کریں۔

یہ بات انہوں نے لاہور میں وفاقی وزیرریلوے خواجہ سعد رفیق کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، پرویز رشید نے عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی کے رہنماء جہانگیر خان ترین نے2014ء میں بیرون ملک رقم بھیجی۔

انہوں نے بتایا کہ اسی رقم کے ذریعے مبینہ طورپر خریدی گئی جائیداد 2011ء میں بنائی گئی ، خان صاحب بغل میں کھڑے اس شخص سے کیوں نہیں پوچھتے جس نے 52کروڑ روپیہ ملک سے باہر بھیجا۔لیکن کیونکہ وہ ان کا خرچ اٹھاتا ہے اس لیئے ان سے نہیں پوچھا جا رہا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ شریف خاندان کا اپنے وقت کا اسٹیل کا سب سے بڑا اور اربوں مالیت کا کارخانہ اتفاق فاﺅنڈریز کو ذوالفقار علی بھٹو نے اپنے قبضے میں لے لیا تھا اور گھر کاروبار ہر چیز کو قبضہ میں لے لیا گیا۔ جس کے بعد شریف خاندان نے دبئی میں کارخانہ بنا لیا اور پاکستان میں بھی چھ نئے کارخانے بنا لئے لیکن اس وقت کسی نے نہیں پوچھا کہ سیڈ منی کہاں سے آئی۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا چار بارفرانزک آڈٹ کیا گیا۔ انہوں نے کہا پی پی رہنما قمر زمان کائرہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کو بھی فرانزک آڈٹ کا نام آگیا ہے ہم فرانزک آڈٹ سے نہیں گھبراتے۔

ہمارا فرانزک آڈٹ ہو چکا، جن کا ڈی این اے ہونا ہے وہ فکر کریں، انہوں نے کہا ہم نے تمام سوالوں کے جواب گزشتہ حکومتوں میں دیئے آج ہمیں آپ سے سوال پوچھنے ہیں۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں