The news is by your side.

Advertisement

پرنسپل کی کرسی اور عسکری صاحب

اردو زبان و ادب میں محمد حسن عسکری کا نام ایک ایسے تخلیق کار کے طور پر لیا جاتا ہے جن کی تنقیدی فکر نے ان کے ہم عصروں کو متاثر بھی کیا اور انھوں نے اپنی نگارشات میں‌ جدید مغربی رجحانات کو اردو داں طبقے میں متعارف کرایا۔

محمد حسن عسکری نام ور نقّاد، افسانہ نگار، مترجم اور انگریزی ادب کے استاد تھے جن سے متعلق ممتاز ادیب اور نقّاد سجاد باقر رضوی نے ایک جگہ لکھا ہے:

’’عسکری صاحب کو کئی بار کالج کی پرنسپلی کی پیش کش ہوئی، مگر وہ ہمیشہ انکار کر دیتے۔

کوئی بیس برس پہلے کی بات ہے، پرنسپل صاحب چھٹّی پر گئے تو انہیں بہ جبر و اکراہ چند دنوں کے لیے پرنسپل کا کام کرنا پڑا۔

لوگوں نے دیکھا کہ وہ پرنسپل کی کرسی پر نہیں بیٹھتے۔ ساتھ کے صوفے پر بیٹھ کر کاغذات نمٹاتے ہیں۔

ایک صاحب سے نہ رہا گیا، پوچھا: ”عسکری صاحب! آپ کرسی پر کیوں نہیں بیٹھتے؟“

یار پھسلتی ہے۔“ عسکری صاحب نے کرسی کی مختصر مگر جامع تعریف کی۔‘‘

Comments

یہ بھی پڑھیں