پاکستان عوامی تحریک کاحکومت کی اقتصادی ترقی پر وائٹ پیپر جاری -
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان عوامی تحریک کاحکومت کی اقتصادی ترقی پر وائٹ پیپر جاری

لاہور : پاکستان عوامی تحریک نے حکومت کی جانب سے اقتصادی ترقی کے دعوؤں پر وائٹ پیپر جاری کردیا، جس میں موٹر وے گروی ہونے کا انکشاف کیا گیا ہے۔

پاکستان عوامی تحریک نے وفاقی حکومت کے اقتصادی ترقی کے دعوؤں کا پول کھول دیا، پی اے ٹی کے خرم نواز گنڈاپور و دیگر مرکزی رہنماؤں نے اقتصادی ترقی کے دعوؤں پر وائٹ پیپر جاری کیا ہے۔

وائٹ پیپر کے مطابق پارلیمنٹ اور چھوٹے صوبے اقتصادی راہداری کے منصوبے سے لاعلم ہیں، نواز حکومت نے تین سال میں غیر ملکی قرضوں میں تیرہ ارب ڈالر کا اضافہ کردیا۔

وائٹ پیپر میں کہا گیا ہے کہ خوراک، تعلیم اور انسانی ترقی کے منصوبوں کے حوالے سے پاکستان کا شمار ایتھوپیا جیسے ممالک میں ہورہا ہے، سرمایہ کاری، زرعی پیداوار، برآمدات میں کمی، قرضوں اورکرپشن میں اضافہ ترقی کا کونسا ماڈل ہے؟ 9سال قبل ترقی کی شرح نمو 7.5 فیصد تھی جو آج 2016 ء میں بھی 4.7 فیصد سے نیچے ہے۔

وائٹ پیپر میں کہا گیا ہے کہ موٹر وے گروی ہیں اور پاناما کے کرپٹ کردار نام نہاد منصوبوں سے قوم کو دھوکہ دے رہے ہیں، عالمی بینک سمیت عالمی مالیاتی اداروں کی رپورٹس کو توڑ مروڑ کر شائع کروایا جاتا ہے۔


مزید پڑھیں : پاناما اور سرل لیکس کے نتائج صفر ثابت ہوں گے، طاہر القادری


رپورٹ کے مطابق پاکستان واحد ملک ہے جو مائیکرو اکنامک، صحت، پرائمری تعلیم اور انفرااسٹرکچر کے شعبوں میں بہتری لانے میں ناکام رہا۔ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کا شمار بدعنوان ترین ملکوں میں ہوتا ہے۔ 168 ملکوں میں سے 116 میں کرپشن پاکستان سے کم ہے۔

گزشتہ روز پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر علامہ طاہر القادری کا کہنا تھا کہ قومی سلامتی کے معاملے پر انصاف نہیں ہے تو عوام کو انصاف ملنا کیسے ممکن ہے، پاناما اور سرل لیکس کے نتائج صفر ثابت ہوں گے۔

علامہ طاہرالقادری نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کا بدلہ قصاص سے کم کسی صورت قبول نہیں کریں گے،نیوز لیک کمیشن کا سربراہ سلطنت شریفیہ کا ملازم ہے، پاناما لیکس کو ہمیشہ کے لیے دفن کرنے پر اتفاق ہوچکا ہے اور نیوز لیکس میں انصاف کی کوئی توقع نہیں ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں