The news is by your side.

Advertisement

آج اپوزیشن کے لیے این آر او کا راستہ ہمیشہ کے لیے ختم کر دیا: حکومتی ارکان

اسلام آباد: قومی اسمبلی سے انسدادِ منی لانڈرنگ ترمیمی بل 2020 کی منظوری کے سلسلے میں حکومتی ارکان نے کہا ہے کہ آج اپوزیشن کے لیے این آر او کا راستہ ہمیشہ کے لیے ختم کر دیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت ارکان کا کہنا ہے کہ انسداد منی لانڈرنگ ترمیمی بل کی منظوری سے اپوزیشن کے لیے این آر او کا راستہ ہمیشہ کے لیے بند ہو گیا ہے، اب اپوزیشن کا اصل امتحان سینیٹ میں شروع ہوگا، قومی مفاد کی قانون سازی پر اپوزیشن کا مؤقف سینیٹ میں آئے گا۔

حکومتی ارکان نے یہ بھی کہا ہے کہ اپوزیشن کی جانب سے سینیٹ میں نیب کو بند کرانے کی کوشش عوام کے سامنے آئے گی۔

بابر اعوان، شہزاد اکبر اور وزیر قانون فروغ نسیم قومی اسمبلی اجلاس میں بھی مشاورت کرتے رہے

واضح رہے کہ آج قومی اسمبلی کے اجلاس میں انسدادِ منی لانڈرنگ ترمیمی بل 2020 کو منظور کیا گیا، اجلاس کے فوری بعد قانونی ٹیم نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی، بابر اعوان نے وزیر اعظم کو قانون سازی اور اسمبلی کارروائی پر بریفنگ دی، وزیر اعظم نے قانون سازی کے اہم مرحلے کی دن بھر خود بھی نگرانی کی۔

قومی اسمبلی نے انسداد منی لانڈرنگ ترمیمی بل 2020 کی منظوری دے دی

بل کی منظوری سے قبل وزیر اعظم عمران خان پارلیمنٹ پہنچے تھے، انھوں نے قانونی ٹیم سے اس موقع پر اہم ملاقات میں اہم ہدایات بھی جاری کیں، وزیر اعظم نے بابر اعوان اور اسپیکر قومی اسمبلی سے بھی ملاقات کی۔

ذرایع کے مطابق اہم ملاقاتوں میں قومی اسمبلی اجلاس کی اسٹریٹیجی طے کی گئی، پی ٹی آئی ارکان کی حاضری یقینی بنانے کے لیے خصوصی ہدایات جاری کی گئیں، بابر اعوان، شہزاد اکبر اور وزیر قانون اجلاس میں بھی مشاورت کرتے رہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں