The news is by your side.

Advertisement

بنگلہ دیش سے بہترین سیکیورٹی کے باوجود ٹیسٹ نہ کھیلنے پر جواز طلب

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ سے بہترین سیکیورٹی کے باوجود ٹیسٹ نہ کھیلنے کا جواز پوچھ لیا۔

تفصیلات کے مطابق پی سی بی نے بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کو ایک اور خط لکھا ہے جس میں بہترین سیکیورٹی کے باوجود ٹیسٹ نہ کھیلنے کا جواز پوچھا گیا ہے، پی سی بی کا کہنا ہے کہ سری لنکن ٹیم نے 2 دوروں میں پاکستان میں 34 دن گزارے ہیں۔

پی سی بی کے مطابق سری لنکن کرکٹ ٹیم اور آفیشلز نے حفاظتی انتظامات پر اطمینان اور خوشی کا اظہار کیا ہے، بنگلہ دیش کی انڈر 16 اور ویمنز ٹیموں نے پاکستان کا دورہ کیا تھا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ فیوچر ٹور پروگرام (ایف ٹی پی) بناتے وقت بنگلہ دیش نے ٹیسٹ شیڈول پر اعتراض نہیں کیا تھا۔

مزید پڑھیں: بنگلادیش کرکٹ بورڈ نے ٹی 20 ٹیم بھی پاکستان بھیجنے پر تحفظات کا اظہار کردیا

خط میں پی سی بی کا کہنا ہے کہ مزید اطلاعات کے لیے سیکیورٹی ماہرین ریگ ڈکاسن سے رابطہ کریں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے صدر نے ٹی ٹوینٹی ٹیم بھی پاکستان بھیجنے پر تحفظات کا اظہار کیا تھا۔

صدر بی سی بی کا کہنا تھا کہ پاکستان کی سیکیورٹی سسٹم پر کوئی شک وشبہ نہیں، ہماری ویمنز اور انڈر 16 ٹیمیں بھی پاکستان کا دورہ کرچکی ہیں، البتہ کھلاڑیوں سے بات جیت جاری ہے جلد فیصلہ سنادیں گے۔

خیال رہے کہ بنگلادیش بورڈ اپنی ٹیم پاکستان بھیجنے پر حیلے بہانے سے کام لے رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں