The news is by your side.

Advertisement

پی ڈی ایم کا 19 جنوری کو الیکشن کمیشن کے سامنے دھرنے کا اعلان

بہاولپور: پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ نے 19 جنوری کو الیکشن کمیشن کے سامنے دھرنے کا اعلان کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے آج بہاولپور ریلی سے خطاب میں اعلان کیا کہ انیس جنوری کو فارن فنڈنگ کیس کے خلاف الیکشن کمیشن کے سامنے مظاہرہ کیا جائے گا۔

انھوں نے کہا بہاولپور کے عوام نے حکومت پر عدم اعتماد کا اظہار کر دیا ہے، پی ڈی ایم حقیقی جمہوریت کے لیے جدوجہد کر رہی ہے، حکومت صرف عوامی نمائندہ ہی چلا سکتا ہے، عوام کے نمائندے وہی ہیں جو پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم پر اکھٹے ہیں۔

فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم کہتا ہے اسٹیبلشمنٹ میری پشت پر کھڑی ہے، اگر ایسا ہے تو اسٹیبلشمنٹ اپنی پوزیشن واضح کرے، اگر آپ اس حکومت کی پشت پر ہیں تو کیا ہم تحریک آپ کے خلاف چلائیں۔

سربراہ پی ڈی ایم نے کہا وزیر اعظم نے بیان دیا کہ انھیں حکومت چلانی نہیں آتی، انھیں وقت چاہیے، یہ کیسی حکومت ہے، اس کے خلاف تحریک جہاد ہے اور جہاد سے پیچھا ہٹناگناہ کبیرہ ہے، یہ ملک کسی کی جاگیر نہیں، اس حکومت کو جانا ہوگا اور نئے الیکشن ہونے چاہیئں۔

پی ڈی ایم نے استعفے دئیے تو حکومت کا کام تمام ہوجائیگا، مریم

فضل الرحمان نے حکومتی پالیسیوں کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا کشمیر کو مودی کے ظلم و ستم پر چھوڑ دیا گیا ہے، کشمیر کا سودا کیا گیا ہے، کشمیر کو 3 حصوں میں تقسیم کرنے کا فارمولا عمران خان کا ہی تھا، انھوں نے کہا تھا مودی الیکشن میں کامیاب ہو تو کشمیر کا مسئلہ حل ہو جائے گا، وہی ہوا مودی نے الیکشن جیت کر کشمیر پر قبضہ کر لیا۔

انھوں نے کہا پی ڈی ایم کی سربراہی میں ملک بھر میں کشمیریوں سے یک جہتی کے لیے مظاہرہ کریں گے، 21 جنوری کو کراچی میں اسرائیل نامنظور ریلی نکالی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں