The news is by your side.

Advertisement

مینار پاکستان میں میدان سج گیا، کرسیاں لگ گئیں

لاہور: مینار پاکستان میں میدان سج گیا، پی ڈی ایم نے گریٹر اقبال پارک میں کرسیاں لگا لیں، اسٹیج تیار ہو گیا اور ساؤنڈ سسٹم بھی نصب کر لیا گیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق پی ڈی ایم کو جلسے میں عوام کے نہ آنے کا خدشہ بھی لاحق ہے اس لیے مینار پاکستان کا صرف 35 فی صد حصہ استعمال کیا جا رہا ہے، جلسہ گاہ کی حدود منٹو پارک کے نصف حصے سے بھی کم ہے، مقرر کردہ حدود کے مطابق 15 سے 20 ہزار کرسیاں ہی لگائی جا سکتی ہیں۔

محدود جلسہ گاہ 20 ہزار افراد کے ساتھ بھر سکتی ہے، گریٹر اقبال پارک کے 5گیٹ ہیں، جلسے کے لیے 2 گیٹ استعمال ہوں گے، ایک گیٹ خواتین کے لیے دوسرا مردوں کے لیے ہوگا، یاد رہے کہ ن لیگ دور میں منٹو پارک کی تزئین و آرائش کر کے اس کا نام گریٹر اقبال پارک رکھا گیا تھا، اس سے قبل پورے اقبال پارک میں 67 ہزار کرسیاں لگتی تھیں۔

تزئین و آرائش میں پارک میں بڑا ریسٹورنٹ، فوارے اور پودے لگائے گئے ہیں، اب پورے پارک میں 55 ہزار کرسیاں لگ سکتی ہیں، جب کہ پی ڈی ایم جلسہ پارک کے 35 فی صد حصے پر ہو رہا ہے، کرونا ایس او پیز کی وجہ سے ہر کرسی میں 2 گز کا فاصلہ بھی رکھا گیا ہے۔

مریم نواز نے رات کو مینار پاکستان پہنچ کر انتظامات کا خود جائزہ لیا، ان کی آمد پر شدید بدنظمی دیکھی گئی، عظمیٰ بخاری کارکنوں کو ہٹنے کی درخواستیں کرتی رہیں، کارکنوں نے دھکم پیل کی، ایک صحافی کے سوال پر مریم نواز نے کہا میں اور بلاول ایک ساتھ جلسہ گاہ آئیں گے، جتنی مرضی رکاوٹیں کھڑی کر دی جائیں، عوام ضرور آئیں گے، یہ اب این آر او مانگیں پی ڈی ایم نہیں دےگی۔

جلسے سے قبل بلاول ہاؤس لاہور میں ن لیگ اور پیپلز پارٹی کا ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں جلسے کی حکمت عملی طے کی گئی، فیصلہ کیا گیا کہ حکومت سے اب صرف استعفیٰ لیا جائے گا۔ ادھر لاہور میں عوامی رابطہ مہم سے خطاب میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہم اپنے سخت ترین مخالفین کے ساتھ مل کر پاکستان میں جمہوریت کے لیے فیصلہ کن جدوجہد کر رہے ہیں۔

ادھر جلسے سے متعلق سیکورٹی خدشات بھی موجود ہیں، پنجاب پولیس نے ایک مراسلہ جاری کیا ہے کہ ٹی ٹی پی جلسے اور پی ڈی ایم قیادت کو نشانہ بنا سکتی ہے، پولیس نے بلاول، مریم نواز، فضل الرحمان، سعد رفیق، ایاز صادق، رانا ثنا اللہ سمیت تمام رہنماؤں کو ممکنہ دہشت گردی کی کارروائیوں سے آگاہ کر دیا۔

دوسری طرف پنجاب حکومت نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ ان کی طرف سے مینار پاکستان پر جلسے کی اجازت نہیں، ضلعی انتظامیہ جلسے کی درخواست مسترد کر چکی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں