The news is by your side.

Advertisement

قبائلی علاقوں سے بے گھر 97 فیصد آئی ڈی پیز واپس آچکے: پی ڈی ایم اے

پشاور: صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (پی ڈی ایم اے) کا کہنا ہے کہ قبائلی علاقوں سے بے گھر آئی ڈی پیز میں سے 97 فیصد واپس آچکے ہیں۔ حکومت آئی ڈی پیز پر اب تک 45 ارب روپے خرچ کر چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخواہ کے صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (پی ڈی ایم اے) کے ڈائریکٹر کمپلیکس ایمرجنسی ونگ ذیشان عبد اللہ نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ حکومت انٹرلی ڈس پلیسڈ پرسنز (آئی ڈی پیز) پر اب تک 45 ارب روپے خرچ کر چکی ہے۔

ذیشان عبداللہ کے مطابق شمالی وزیرستان کے آئی ڈی پیز خاندانوں کو 12 ہزار روپے ماہانہ دیے جاتے ہیں، ماہانہ نقد مالی امداد پر اب تک 31 ارب روپے خرچ ہوئے۔ قبائلی علاقوں سے بے گھر آئی ڈی پیز میں 97 فیصد واپس آچکے ہیں۔

ڈائریکٹر ایمرجنسی ونگ کا کہنا تھا کہ واپس آنے والوں کو 35 ہزار فی خاندان بھی دیے جاتے ہیں، فی خاندان کیش پر اب تک ساڑھے 8 ارب خرچ ہوئے ہیں۔ مکانات کو نقصانات پر اب تک 21 ارب 90 کروڑ ادا کیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ علاقے کلیئر ہونے پر مزید متاثرین آئیں گے۔

خیال رہے کہ رواں برس بجٹ میں قبائلی علاقوں کے لیے 83 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔ افوج پاکستان نے بھی رواں مالی سال کے دفاعی اخراجات میں رضاکارانہ کمی کا فیصلہ کیا تھا۔

وزیر اعظم عمران خان کے مطابق اس بچت کے نتیجے میں میسر آنے والا سرمایہ خیبر پختونخواہ میں ضم ہونے والے قبائلی اضلاع اور بلوچستان کی تعمیر و ترقی میں صرف کیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں