The news is by your side.

Advertisement

افغانستان کا امن اور استحکام ہمارے مفاد میں ہے، وزیرخارجہ

استنبول: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ افغانستان کا امن اور استحکام ہمارے مفاد میں ہے، پاکستان سمجھتا ہے افغانستان میں قیام امن سے تجارت بڑھے گی۔

تفصیلات کے مطابق استنبول میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ترکی نے شہریت کے لیے دروازے کھولے ہیں، جو شہریت سے مستفید ہونا چاہتا ہے ہو، ہمیں اعتراض نہیں ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ غیرقانونی امیگریشن یقیناً تشویش کا باعث ہے، غیرقانونی امیگریشن پر پاکستان، ایران اور ترکی کو مل کر بیٹھنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں ہماری بہت اچھی نشست ہوئی، ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں پاکستان کی نمائندگی کی، کانفرنس کے اختتام پر استنبول ڈیکلیئریشن انتہائی جامع ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ آئندہ ریجنل ٹیکنیکل گروپوں کے اجلاس بلائے جائیں گے، پاکستان بھی 2020 میں ماحولیات اور زراعت پر اجلاس بلائے گا۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ افغانستان کا امن اور استحکام ہمارے مفاد میں ہے، پاکستان سمجھتا ہے افغانستان میں قیام امن سے تجارت بڑھے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے لیے افغانستان میں سرمایہ کاری، تعمیرنو کے مواقع ہوں گے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ امریکا افغان طالبان مذاکرات میں پاکستان نے مثبت کردار ادا کیا، پاکستان نے ٹرائبل بیلٹ پر سیاسی اتفاق رائے پیدا کیا ہے، حکومت نے ٹرائبل بیلٹ کی تعمیر وترقی کے لیے خصوصی پیکچ دیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں واضح کیا افغان امن عمل چاہتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں