The news is by your side.

Advertisement

ادارے انصاف نہ دیں تو احتجاج کرنا ہمارا حق ہے،عمران خان

اسلام آباد : تحریک انصاف کے سربراہ کا کہنا ہے کہ جب ادارے انصاف نہیں دے رہے تو احتجاج کرنا ہمارا حق بنتا ہے،ہمارا مطالبہ ہے کہ وزیراعظم استعفیٰ دیں یا خود کو احتساب کے لیے پیش کریں۔

ایک طرف عوام اوردوسری طرف کرپٹ مافیا ہےتفصیلات کے مطابق سربراہ تحریک انصاف عمران خان کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہمارا شروع دن مطالبہ رہا ہے کہ یا تو وزیر اعظم استعفی دیں یا خود کو احتساب کے لیے پیش کریں جب یہ مطالبہ نہیں مانا گیا تو ملک کے ہر مقتدر ادارے کے دروازے پر دستک دی لیکن کہیں بھی سنوائی نہیں ہوئی تو احتجاج کا فیصلہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ بادشاہت نے ملک کے اداروں کو تباہ کردیا ہے ہمیں ملک کو کرپٹ حکمرانوں سے اور اداروں کو تباہی سے بچانا ہے جس کے لیے احتجاج کرنا ہمارا آئینی اور قانونی حق ہے۔

ایک سوال کے جواب میں سربراہ تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ ہمارا کیس صرف پانامہ لیکس یا وزیر اعطم کی کرپشن کے خلاف ہی نہیں بلکہ ہمارا کیس اداروں کی میں بیٹھے درباریوں کے خلاف کے بھی ہے جو اداروں کی بدحالی کے ذمہ دار ہیں۔

اس لیے پانامہ لیکس پر سپریم کورٹ میں کیس چلتا رہے گا اور قصوروار کو سزا بھی ملے گی اور ہمارا احتجاج بھی ساتھ ساتھ جاری رہے گا کیوں کہ یہ احتجاج اداروں کی کارکردگی کے خلاف بھی ہے۔

عمران خان نے اپوزیشن جماعتوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ایک رہنما ہمیں سڑکوں پر نکلنے اور اسلام آباد بند کرنے سے منع کر رہے ہیں کیوں کہ یہ لوگ خود کرپت ہیں اس لیے ہمیں کرپٹ سیاست دانوں کے خلاف احتجاج نہ کرنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔

حکومت کی جانب سے دفاعی حکمت عملی اپنانے کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں عمران خان نے کہا کہ جب ادارے انصاف نہیں دے رہے تو احتجاج کرنا ہماراحق ہے،کوئی کسی غلط فہمی نہ رہے اگر پُر امن احتجاج کو روکا گیا تو نتائج کی ذمہ دار خود حکومت ہو گئی۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان نے ایک مرتبہ پھر دعوی کرتے ہوئے کہا کہ 2 نومبر کو عوام کا سمندر اسلام ٓباد میں موجود ہو گا اور سارے کرپٹ حکمرانوں کو بہا کر لے جائے گا،انصاف کے اداروں کو مفلوج کرنے والے حکمرانوں کا مقدمہ عوامی عدالت میں چلے گا اور عوام ہی دو نومبر کو کرپٹ حکمرانوں کو سزا سنائیں گے۔

 

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں